کامن ویلتھ کراٹے چیمپئن شپ مبارک

ایڈیٹر  |  اداریہ

پاکستان کے سعدی عباس نے کامن ویلتھ کراٹے چیمپئن شپ میں گولڈ میڈل جیت لیا، ایونٹ میں اپنے خرچے پر شرکت کی !
ہمارے ہاں ٹیلنٹ کی کمی نہیں لیکن اس کی ناقدری کی بھی کوئی انتہاءنہیں۔من حیث القوم ہم سب کرکٹ کے جنون میں گرفتار ہیں جبکہ دیگر کھیلوں کو پس پشت ڈال رکھا ہے۔ سعدی عباس نے کامن ویلتھ کراٹے کا چیمپئن بن کر ملک و قوم کا نام روشن کیا ہے لیکن کراٹے فیڈریشن نے صرف مبارکباد دینے پر اکتفا کیا ہے۔ فیڈریشن نے کرایہ تک نہیں دیا۔ اس سے قبل سنوکر کے چیمپئن محمد آصف کے ساتھ بھی یہی سلوک کیا گیا تھا، وہ بھی کرایہ مانگ تانگ کر گیا اور چیمپئن بن کر واپس آیا تھا، اسکے ساتھ حکومت اور اداروں نے بڑے وعدے کئے لیکن وہ بیچارہ ابھی تک ان وعدوں کی آس میں ہے کہ کب پورے ہونگے۔ حکومت کرکٹ کے علاوہ دیگر کھیلوں کی بھی سرپرستی کرے۔ ہمارے پاس ٹیلنٹ موجود ہے لیکن ہم اس کی قدر نہیں کر رہے۔ حکومت تمام کھیلوں کی سرپرستی کرے تاکہ کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی ہو اور وہ مزید محنت سے ملک کا نام روشن کریں۔