بھارت سے پانی پردوٹوک بات کی جائے

ایڈیٹر  |  اداریہ
 بھارت سے پانی پردوٹوک بات کی جائے

 بھارت کے اچانک پانی چھوڑنے اور حالیہ بارشوں کے باعث دریائے چناب میں ہیڈ مرالہ کے مقام پر درمیانے درجے کا سیلاب آگیا ہے جس سے پانی کا بہائو ایک لاکھ 70 ہزار کیوسک تک پہنچ گیا ہے جبکہ بھارت کی عام آدمی پارٹی کے سربراہ نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کا حل ناگزیر ہے لہٰذا پاکستان سے بات چیت شروع کی جائے۔ بھارت نے پاکستان کی طرف بہنے والے دریائوں پر ڈیم بنا رکھے ہیں اور ان ڈیموں کو بھرنے کیلئے بھارت پاکستان کی طرف آنیوالا پانی بند کردیتا ہے جس کے باعث ہمارے دریا خشک ہیں اور دریائوں میں ریت اڑنا شروع ہو گئی ہے لیکن جب بھارت کے پاس پانی وافر ہوجاتا ہے تو وہ سارا پانی چھوڑ کر ہماری فصلوں اور آبادیوں کو پانی میں ڈبو دیتا ہے۔ پانی کی کمی کے باعث تھر میں قحط سالی آچکی ہے جبکہ چولستان میں بھی یہی صورتحال ہے حکومت بھارت سے پانی کے مسئلے پر دو ٹوک بات کرے تاکہ ہم پانی کی بوند بوند کو ترس کر مرنے سے بچ سکیں۔ عام آدمی پارٹی نے مسئلہ کشمیر کے حل کی بات کی ہے بھارتی عوام بھی دو پارٹیوں کے چنگل سے نکل چکے ہیں۔ بھارت میں الیکشن کی گہما گہمی ہے لہٰذ حکومت پاکستان اس سے فائدہ اٹھا کر مسئلہ کشمیر کے حل کی بات کرے تاکہ مسائل کو افہام و تفہیم سے حل کیاجائے۔