یورپی یونین نے 2013 کے انتخابات کو شفاف قرار دے دیا

ایڈیٹر  |  اداریہ
یورپی یونین نے 2013 کے انتخابات کو شفاف قرار دے دیا

پاکستان میں یورپی یونین کے انتخابی مبصرین کے سربراہ مائیکل گیلر نے کہا ہے کہ پاکستان میں 2013 کے انتخابات صاف اور شفاف ہوئے تھے لیکن جمہوریت کیلئے میڈیا کی آزادی ضروری ہے۔ حکومت میڈیا کی آزادی کو یقینی بنائے۔
11 مئی 2013ءکے انتخابات کو تمام سیاسی پارٹیوں نے تسلیم کیا اور حلف اٹھا کر جمہوریت کے تسلسل کو برقرار رکھا۔ کسی بھی سیاسی جماعت نے تب دھاندلی کا شور کیا نہ ہی کوئی احتجاجی تحریک چلائی تھی۔ تحریک انصاف نے بھی صوبہ خیبر پی کے میں حکومت بنا کر الیکشن کو تسلیم کیا تھا لیکن ایک سال بعد تحریک انصاف کو الیکشن میں دھاندلی نظر آ رہی ہے۔ اب عمران خان دھاندلی پر احتجاج کرکے جمہوریت کی گاڑی کو پٹڑی سے اتارنے کی کوشش میں ہیں۔ یورپی یونین کی مبصر ٹیم کے سربراہ نے بھی اب 2013ءکے انتخابات کو شفاف قرار دیا ہے تو عمران خان اس حقیقت کو تسلیم کرکے اب احتجاجی تحریک ترک کردیں اور خیبر پی کے کے عوام کے مسائل حل کریں۔ انہیں انصاف فراہم کریں۔ میڈیا جمہوریت کو مستحکم کرنے کا ذریعہ ہے۔ حکومت میڈیا کی آزادی کو یقینی بنائے۔ اگر میڈیا آزاد ہو گا تو جمہوریت پر کوئی بھی آمر شب خون مارنے کی کوشش نہیں کریگا۔ سیاستدان اور حکمران مل کر عوام کی فلاح و بہبود کیلئے کام کریں اور عمران خان احتجاج کی بجائے اگلے انتخابات کا انتظار کریں اور منتخب حکومت کو ملکی نظام چلانے کا موقع دیں۔