بگ تھری منصوبہ کرکٹ کیلئے تباہ کن ہے

ایڈیٹر  |  اداریہ

انٹر نیشنل کرکٹ کونسل پر تین بڑے ممالک کے قبضے کا خواب پورا ہو گیا۔ بگ تھری اب کرکٹ پر راج کریں گے۔ جنوبی افریقہ عین موقع پر دھوکہ دیکر پاکستان اور سری لنکا کو تنہا کر گیا۔آئی سی سی پر بگ تھری کے قبضے کے بعد کرکٹ کا زوال شروع ہو جائے گا۔ آئی سی سی ایگزیکٹو کمیٹی کی چیئرمین شپ بھارتی کرکٹ بورڈ کے چیئرمین سری نواسن نے سنبھال لی ہے۔ جس کے خلاف پہلے ہی انڈین پریمیئر لیگ میں کرپشن کا کیس چل رہا ہے۔ کرپشن کا سامنا کرنے والے سری نواسن سے کس چیز کی توقع رکھی جا سکتی ہے کہ مستقبل میں کرکٹ کو جوئے سے پاک کرے گا یہ ناممکن ہے۔ چیئرمین پی سی بی ذکاءاشرف نے پاکستان کے موقف کو احسن طریقے سے پیش کیا۔ وہ انتہائی خوش آئند ہے۔ جنوبی افریقہ نے آخری وقت میں آکر پاکستان اور سری لنکا کا ساتھ چھوڑ کر کرکٹ کو بڑا نقصان پہنچایا ہے۔ اب کرکٹ سے ہونے والی بڑی آمدنی کو بھارت‘ آسٹریلیا اور انگلینڈ آپس میں تقسیم کریں گے اور غریب ممالک ان کے رحم و کرم پر ہوں گے بگ تھری کے قبضے کے لئے مذکورہ ممالک کو 8 ووٹوں کی ضرورت تھی۔ جو سا¶تھ افریقہ نے ان کا ساتھ دیکر پوری کر دی۔ جنوبی افریقہ کو اس کے بدلے ورلڈکپ کی میزبانی ملے گی جبکہ اس کے علاوہ دیگر مراعات بھی اس کے حصے میں آئیں گی۔ بگ تھری منصوبے سے کرکٹ کا مستقبل سیاہ ہو گا۔