پاکستانیوں پر بیرونی سفر کیلئے سرٹیفکیٹ لازمی

ایڈیٹر  |  اداریہ
پاکستانیوں پر بیرونی سفر کیلئے سرٹیفکیٹ لازمی

عالمی ادارہ صحت نے پاکستانیوں پر سفری پابندیاں عائد کردی ہیں۔
پاکستان پولیو کے حوالے سے خطرناک صورتحال سے دو چار ہے۔ گزشتہ ڈیڑھ سال میں پولیو قطرے پلانے والی ٹیموں اور انکی سیکورٹی پر مامور سیکورٹی کے 28 کے قریب افراد کو قتل کیا جا چکا ہے۔ شدت پسند اپنے مذموم مقاصد کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے پولیو ورکرز قتل کر رہے ہیں اب جس کے باعث پولیو کے قطرے پلانے پر ورکرز تیار ہی نہیں ہو رہے اور اب نوبت یہاں تک پہنچ چکی ہے کہ عالمی ادارہ صحت نے پاکستانیوں پر سفری پابندیاں لگانے بارے فیصلہ کر لیا ہے۔بھارت وہ پہلا ملک ہے جس نے پاکستانیوں کے بھارتی سفر پر جانے سے قبل پولیو سرٹیفیکیٹ کو لازمی قرار دیا ہے‘ اب عالمی ادارہ صخت نے بھی پاکستانیوں پر سفر کرنے کیلئے سرٹیفکیٹ لازمی قرار دے دیا ہے جو کہ ایٹمی طاقت کے حامل ملک کیلئے انتہائی افسوسناک ہے۔ پاکستان میں شکیل آفریدی نے پولیو قطروں کی آڑ میں اسامہ بن لادن کے ٹھکانے کے بارے امریکیوں کو آگاہ کیا تھا اب شدت پسند اسی بات کو سامنے رکھتے ہوئے پولیو ویکسینیشن پلانے والے رضا کاروں پر پولیو مہم کی آڑ میں مغربی ممالک کی جاسوسی کرنے کا الزام لگاتے ہیں حالانکہ اس میں کوئی حقیقت نہیں ہے۔ حکومت پاکستان نے پہلے ہی قطرے پلانے کیلئے فوج کی مدد حاصل کر لی ہے۔ اب حکومت سنجیدگی سے اس پر قابو پائے تاکہ پاکستانی عوام سفری پابندیوں سے بچ سکے۔