کے فور کا منصوبہ وزیر بلدیات کی سنجیدگی یا مذاق

ایڈیٹر  |  اداریہ
کے فور کا منصوبہ  وزیر بلدیات کی سنجیدگی یا مذاق

صوبائی وزیر بلدیات جام خان شورو نے شہر قائد کے باسیوں کو خوشخبری سنائی ہے کہ انہوں نے کراچی میں پانی کی فراہمی کے بڑے منصوبے K4 پر فیلڈ میں کام کاآغاز کردیا ہے اور ایک سال کے اندر شہریوں کو درپیش پانی کی کمی ختم کردی جائے گی۔ کراچی کے رہائشیوں کیلئے پانی کی کمی ایک سنگین مسئلہ بنی ہوئی ہے ایک طویل عرصہ سے یہاں کے لوگ پانی کو ترس رہے ہیں ہفتہ بعد علاقوں میںپانی کی سپلائی تو معمولی بات ہے اکثر علاقوں میںتو مہینوں مہینوں پانی نہیں آتا جس سے ٹینکرمافیا کے وارے نیارے ہورہے ہیں۔ یہ بات بھی سرکاری ریکارڈ پر ہے اوراخبارات میںبھی خبریںشائع ہوتی رہی ہیں کہ کئی ہائیڈرنٹ تو سرکاری افسران وکارپردازان کے ہیں اوراسی وجہ سے پانی کی قلت جان بوجھ کر پیدا کی جاتی ہے۔ بظاہر اس کمی کو دور کرنے کیلئے برسوں قبل پیپلز پارٹی ہی کی حکومت میں مذکورہ منصوبہ K4 بنایا گیا تھا پھرنہ جانے کہاں چلا گیا۔ اب وزیر موصوف نے ایک بار پھر اعلان فرمادیا کہ ”ہم نے آ ج سے فیلڈ میں کام شروع کردیا ہے“اللہ کرے وزیر صاحب کا یہ فرمانا واقعی ”فرمانا “ ہو کوئی ”لالی پاپ“ نہ ہو۔ کیونکہ کراچی کے عوام سے بہت مذاق ہوچکا اب اس شہر کو بنیادی سہولیات سے زیادہ عرصہ محروم رکھنا کسی بھی سیاسی جماعت کیلئے نیک شکون نہ ہوگا۔