مصری آرمی چیف نے سازش خود ہی بے نقاب کر دی؟

ایڈیٹر  |  اداریہ

امریکی ایما پر مصر میں آمریت مسلط کرنے والے جنرل السیسی پھٹ پڑے۔ مصری آرمی چیف جنرل السیسی نے کہا ہے کہ امریکہ نے ہمیں تنہا چھوڑ دیا۔ مصری عوام سے منہ پھیر لیا۔ مصری عوام امریکہ کے روئیے کو کبھی فراموش نہیں کریں گے۔ بالآخر مصری آرمی چیف کے منہ سے سچ نکل ہی گیا ہے کہ امریکہ نے انہیں مرسی حکومت کا تختہ الٹنے کے لئے تیار کیا۔ اور جب مصری فوج اقتدار پر قابض ہو گئی تو جو وعدے امریکہ نے مصری فوج سے کئے تھے وہ ابھی تک پورے نہیں کئے ۔ان کے بقول امریکہ نے مصری عوام کو تنہا چھوڑ دیا ہے۔ جنرل السیسی نے جب اقتدار پر قبضہ کیا تھا۔ تب امریکہ نے سب سے پہلے مصری فوج کے اس اقدام کی مخالفت کی تھی۔ لیکن وہ مذمت صرف دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کیلئے تھی۔ مصری آرمی چیف کے انکشاف کے بعد اب تحریر سکوائر میں جمع ہو کر مرسی کا تختہ الٹنے کا اصرار کرنے والے مصری عوام کی آنکھیں کھل جانی چاہئیں کہ امریکہ نے انہیں مرسی کے خلاف استعمال کر کے پھینک دیا ہے۔ لیبیا، شام کے بعد اب مصر میں قتل گاہیں سج چکی ہیں۔ مسلمان ممالک کو اپنی صفوں میں چھپے میر جعفر اور میر صادق جیسے کرداروں کے چہروں سے نقاب اتارنا چاہئے تاکہ مسلم اُمہ کی صفوں میں انتشار ڈالنے والوں کے چہرے بے نقاب ہو سکیں۔ مصری فوج کو اخوان المسلمون کے دھرنوں پر فائرنگ سے گریز کرنا چاہئے کیونکہ آرمی چیف کے انکشاف کے بعد فوج کا اقتدار میں رہنا اپنی ساکھ کو تباہ کرنے کے مترادف ہے۔