قوم کو بھکاری بنانے کی بجائے مستقل روزگار دیا جائے

ایڈیٹر  |  اداریہ

وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت صوبے کے انتہائی کم وسیلہ خاندانوں پر معاشی بوجھ کم کرنے کیلئے براہ راست ٹارگٹڈ سبسڈی فراہم کرنے کے انقلابی پروگرام کا آغاز کر رہی ہے۔
پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں بے نظیر انکم سپورٹ کے ذریعے غریب اور مستحق خاندان کو ماہانہ ایک ہزار روپیہ دیا جاتا رہا۔ جس کی مسلم لیگ ن نے کھل کر مخالفت کی تھی اور برسراقتدار آتے ہی اس سکیم کا نام تک تبدیل کر دیا تھا۔ پچھلے پانچ سالہ دور میں میاں برادران نے خود بھی اس طرح کی کافی سکیمیں چلائی تھیں لیکن ان کا رزلٹ سب کے سامنے ہے۔ اقربا پروری اور اپنے کارکنان کو نوازنے سے گریز کیا جائے لیکن بہتر یہی ہے کہ قوم کو بھکاری بنانے کی بجائے انہیں مستقل پا¶ں پر کھڑا کرنے کیلئے کوئی منصوبہ تشکیل دیں۔ اس سے قبل حکومت نے طلبا و طالبات کو لیپ ٹاپ دیئے تھے۔ انرجی سولر دیئے لیکن وہ بھی کوئی مستقل پا¶ں پر کھڑا ہونے والے کام نہیں ہیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب نجی سیکٹر میں ملازمتوں کے مواقع پیدا کرنے کی کوشش کریں۔ تاکہ بے روزگار افراد کو بہتر روزگار مل سکے اور وہ اپنے ہاتھوں سے کام کرکے اپنے گھر کو چلا سکیں۔