ساندہ: 2 بیٹیوں کی ماں کو مبینہ زیادتی کے بعد قتل کر کے نعش نالے میں پھینک دی

ساندہ: 2 بیٹیوں کی ماں کو مبینہ زیادتی کے بعد قتل کر کے نعش نالے میں پھینک دی

لاہور (سٹاف رپورٹر) ساندہ کے علاقہ میں محنت مزدوری کرنیوالی 2 بچیوں کی ماں کو مبینہ زیادتی کے بعد قتل کر کے نعش نالے میں پھینک دی۔ پولیس نے نعش پوسٹمارٹم کےلئے مردہ خانے بھجوا دی ہے۔ معلوم ہوا ہے ساندہ تھانہ کے قریب رہائش پذیر 7 بیٹیوں کے باپ رزاق کی بڑی بیٹی فرحت 2 بیٹیوں کی ماں تھی فرحت کا خاوند جاوید سے جھگڑا چل رہا تھا اور وہ اپنے باپ کے گھر رہ رہی تھی۔ مقتولہ ننھی بچیوں کا پیٹ پالنے کےلئے گھر کے قریب فیکٹری میں کام کرتی تھی بڑھتی ہوئی مہنگائی کی وجہ سے فرحت نے فیکٹری میں 16 سے 18 گھنٹے کام کرنا شروع کر دیا۔گذشتہ روز مقتولہ گھر سے فیکٹری میں کام کرنے کےلئے گئی اور رات کو واپس ہی نہیں آئی۔ پولیس کے مطابق پولیس کو اطلاع ملی ساندہ تھانے کے قریب نالے میں نعش پڑی ہے جس پر پولیس نے موقع پر پہنچتے ہوئے نعش کو نالے سے باہر نکالا تو اہل علاقہ نے خاتون کی شناخت کی۔ نعش پوسٹمارٹم کےلئے مردہ خانے بھجوا دی ہے۔ پولیس کے مطابق ہو سکتا ہے خاتون کو مبینہ زیادتی کے بعد قتل کر دیا گیا ہو۔
خاتون قتل