قصور میں خاتون کو اغوا کے بعد اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا

قصور+ فیصل آباد+ ساہیوال (نامہ نگاران+ نمائندہ خصوصی) قصور کی خاتون کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق قصور میںکنگن پور کے نواح موضع لالو کے میں رفعہ حاجت کی غرض سے آنیوالی جواں سالہ خاتون کو اوباش ملزمان اٹھا کر لے گئے اور اجتماعی زیادتی کر ڈالی۔  مقدمہ کی مدعیہ (م) نے پولیس کو بتایا وہ تین روز قبل رفع حاجت کیلئے باہر کھیتوں کی جانب جا رہی تھی کہ10 اوباش ملزمان جو شراب کے نشہ میں دھت تھے اُسے کیری ڈبہ میں زبردستی بٹھا کر لاہور لے گئے جہاں انہوں نے اجتماعی طور پر اسکے ساتھ زیادتی کر ڈالی۔ پولیس تھانہ کنگن پور نے مقدمہ درج کرلیا ہے اور ملزمان کی گرفتاری کیلئے دو الگ الگ چھاپہ مار ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہیں۔علاوہ ازیں فیصل آباد میں خاتون اور 5سالہ بچے، ساہیوال میں کمسن بچی کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔ فیصل آباد کے تھانہ صد رجڑانوالہ کے علاقہ چک نمبر354 گ۔ ب کی خاتون (س) اکیلی گھریلو کام کاج میں مصروف تھی کہ ملزم صفدر علی زبردستی گھرمیں داخل ہوگیا اور اسے مبینہ طور پر زیادتی کانشانہ بناکر موقع سے فرارہوگیا۔ پولیس نے متاثرہ خاتون کی درخواست پر ملزم کیخلاف مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی۔ تھانہ ملت ٹائون کے علاقہ چک نمبر198 ر۔ ب کے  عبدالرحمان کا 5سالہ بیٹا بلال گلی میں کھیل کود میں مصروف تھا، ملزم عاطف اسے ورغلا پھسلا کر اپنے ساتھ گھر لے گیا جہاں اُسے مبینہ طورپر زیادتی کانشانہ بناتارہا۔ پولیس نے ملزم کیخلاف مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی۔ چک نمبر 51جی ڈی میں اوباش ملزم محمد عمران محمد لطیف کی دس سالہ بیٹی (ا۔م) کو ورغلا پھسلا کر اپنے ساتھ ایک ویران جگہ میں لے گیا اور زیادتی کرڈالی بچی کی حالت غیر ہونے پر ملزم فرار ہو گیا۔