واسا: فیول کی مد میں اڑھائی کروڑ کے گھپلے، ناقابل استعمال گاڑیوں کا خرچہ بھی ڈالا گیا

واسا: فیول کی مد میں اڑھائی کروڑ کے گھپلے، ناقابل استعمال گاڑیوں کا خرچہ بھی ڈالا گیا

لاہور (خصوصی نامہ نگار ) واسا میں پٹرول و ڈیزل کی مد میں اڑھائی کروڑ روپے کی کرپشن کا انکشاف ہوا ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ ایم ڈی واسا کو پٹرول و ڈیزل کی مد میں 25 لاکھ روپے کے بل موصول ہوئے مذکورہ پٹرول و ڈیزل ڈرینج ڈائریکٹوریٹ کی گاڑیوں کیلئے خریدا گیا تھا جس پر ایم ڈی واسا نے خریداری کا تمام ریکارڈ قبضے میں لے لیا جس میں انکشاف ہوا ہے واسا افسروں نے کھڑی موٹرسائیکلوں اور گاڑیوں کے نمبرز پر بھی پٹرول اور ڈیزل کا خرچ ڈال دیا جبکہ یہ گاڑیاں اور موٹرسائیکلیں ناقابل استعمال ہیں۔یہ بھی بتایا گیا ہے کہ اڑھائی کروڑ روپے مالیت کا یہ ڈیزل اور پٹرول آئوٹ فال روڈ پر واقع سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ لاہور کے پٹرول پمپ سے ڈلوایا گیا۔ ایم ڈی واسا کی جانب سے کی جانے والی انکوائری میں ابتدائی طور پر واسا داتا گنج بخش ٹائون کے ایکسین اور ڈائریکٹر ملوث ہو سکتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق ہر پہلو کے جائزہ کے بعد اس حوالے سے حتمی رپورٹ تیار ہو گی اور ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کے لئے معاملہ اینٹی کرپشن کو بھیجا جائے گا۔