ریلوے آفیسرز کی طرف سے ساتھی پر تشدد کیخلاف ملازمین کا شدید احتجاج

ریلوے آفیسرز کی طرف سے ساتھی پر تشدد کیخلاف ملازمین کا شدید احتجاج

لاہور (سٹاف رپورٹر) ریلوے آفیسر کی جانب سے الیکٹرک معاون شہزاد مغل کو تشدد کا نشانہ بنانے پر ملازمین نے ریلوے افسروں کی رہائش گاہوں پر مشتمل کالونی میو گارڈن کی بجلی اور پانی کی سپلائی بند کر دی جس پر ریلوے افسران اور انکے اہلخانہ چیخ اٹھے میو گارڈ ن میں ملازمین نے شدید احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں ملازمین کی بڑی تعداد نے شرکت کی اور ملازم پر تشدد کرنے پر ریلوے آفیسر کے خلاف سخت نعرے بازی کی جبکہ جنرل منجیر ریلوے جنید قریشی کے احکامات پر ریلوے ملازم پر بدترین تشدد کرنیوالے آفیسر ناصر خلیلی کے خلاف ریلوے سٹیشن مقدمہ درج کر لیا۔ معلوم ہوا ہے کہ الیکٹر ک معاون شہزاد مغل میوگارڈن میں پانی والی ٹینکی پر فرائض سرانجام دے رہا تھا تاہم الیکٹرک معاون کی مبینہ لاپرواہی کی وجہ سے پانی والی ٹینکی بہت زیادہ اوور فلو ہوگئی اور پانی ریلوے آفیسر ناصر خلیلی کی کوٹھی نمبر 61میں جمع ہو گیا جس پر ریلو ے آفیسر طیش میں آگیا اور اس نے الیکٹرک معاون شہزاد مغل کو اپنی کوٹھی طلب کر کے تشد د کا نشانہ بنایا جس پر گزشتہ روز ریلوے لیبر یونین کے عہدیدار میوگارڈن پہنچ گئے اور انہوں نے صبح 8بجے میوگارڈن کی بجلی اور پانی کی سپلائی بند کر کے شدید احتجاج شروع کر دیا۔ پانی اور بجلی کی بندش پر ریلوے افسران چیخ اٹھے۔ ریلوے حکام نے احتجاجی ملازمین کو مسئلہ حل کرنے کی یقین دہانی کروائی۔