ایف آئی اے سے متعلقہ زیرالتوا مقدمات کی تعداد تیزی سے بڑھنے لگی

ایف آئی اے سے متعلقہ زیرالتوا مقدمات کی تعداد تیزی سے بڑھنے لگی

لاہور( شہزادہ خالد) مقدمات کی پیروی میں لاپروائی برتنے سے عدالتوں میں ایف آئی اے سے متعلقہ زیر التوا  مقدمات کی تعداد میںتیزی سے اضافہ ہونے لگا ۔  ایف آئی اے کی جانب سے عدالتی احکامات کی تعمیل نہ کرنے کے باعث سائبر کرائم ،انسانی سمگلروں کے خلاف اور دیگر ایف آئی اے سے متعلق دائر اندراج مقدمات کی درخواستیں، مقدمات التوا کا شکار ہونے سے سائلوں کو شدید پریشانی کا سامنا ہے ۔گزشتہ برس ایڈیشنل سیشن جج محمد نعیم نے ڈائریکٹر ایف آئی اے کو مراسلہ بھیجا تھاکہ ایف آئی اے کے حوالے سے ملنے والی درخواستوںکی پیروی کیلئے آفیسرز کو عدالت میں پیش ہونے کا پابند اور عدالتی احکامات پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے۔ مقدمات کے اندراج کیلئے سائلین ایف آئی اے کے دفتر میں آتے ہیں، شنوائی نہ ہونے پر سائلین مقدمات کے اندراج کیلئے  عدالتوں کا رخ کرتے ہیں، متعلقہ درخواستوں میں ایف آئی اے حکام و دیگر کی جانب سے عدالت میں جواب داخل نہ کروانے ،پیش نہ ہونے کے علاوہ عدالتی احکامات پر عملدرآمد نہ کرنے کے باعث زیر سماعت درخواستیں التوا کا شکار ہورہی ہیں۔ ملک بھر میں انٹر نیٹ کا استعمال بڑھنے سے  سائبر کرائم میں  تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔گیٹ وے ایکسچینج بھی  پکڑی جا رہی ہیں لیکن مقدمات کی پیروی نہ ہونے پر مجرم سزا سے بچ جاتے ہیں۔