چالانوں کے ہدف کے لئے وارڈن متحرک‘ موٹر سائیکل سوار فیملیوں کے لئے شاہراہیں ”نوگو ایریا“ بن گئیں

لاہور (اپنے نمائندے سے) صوبائی دارالحکومت میں ٹریفک پولیس کے ہر سیکٹر کے انچارج کے چالان کرنے کے ٹارگٹ نے موٹرسائیکل سوارفیملیوں کیلئے شاہراہوں کو نوگو ایریا میں تبدیل کر دیا پچھلے 15 دنوں میں اب تک لاہوریوں کے 16 ہزار سے زائد چالان کر دیئے گئے ہیں پہلے سے مہنگائی میں پسے ہوئے موٹرسائیکل سوارورں کی ٹریفک حکام کی طرف سے چالان مہم نے عملاً چیخیں نکلوا دیں ہر چوک میں 6 سے 7 وارڈن ٹریفک کی ذمہ داریوں سے فارغ ہوکر صرف ٹارگٹ ”اچیو“ کرتے نظر آ رہے ہیں ایک سروے کے مطابق لاہور میں روزانہ صرف موٹرسائیکل سواروں کے 2 لاکھ روپے سے زائد کے چالان ہو رہے ہیں ”نوائے وقت“ آفس فون کرکے کئی متاثرین نے کہا کہ پنجاب حکومت نے رہے سہے غریبوں کی جیبوں پر ڈاکے ڈالنے اور انہیں مزید خوار کرنے کیلئے ٹریفک پولیس کو بھی ہیلمٹ کی پابندی کے نام پر اپنے ریونیو میں اضافے کیلئے کھلی چھٹی دیدی۔ ہر دور میں چند مہینوں کیلئے حکومت اور ٹریفک پولیس کو اچانک ہیلمٹ کی پابندی کا خیال ضرور آتا ہے مگر 5 ماہ گزرتے ہی یہ ”پابندی اور مہم“ از خود ہی دم توڑ جاتی ہے۔