صحافی کالونی میں مکان کی تعمیر کیلئے نقشہ منظور نہ کرنے پر ایل ڈی اے کیخلاف درخواست

لاہور(وقائع نگار خصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس اعجاز الاحسن نے جرنلسٹ کالونی میں مکان کی تعمیر کےلئے نقشہ منظور نہ کرنے پر ایل ڈی اے خلاف دائر رٹ درخواست میں مدعا علیہان سے دو ہفتوں میں رپورٹ طلب کر لی ہے۔لاہور پریس کلب کے سابق سیکرٹری اور سیئنر صحافی سید شعیب الدین احمد کی طرف سے دائر درخواست میں سید رئیس الدین احمد ایڈووکیٹ نے اپنے دلائل میں موقف اختیار کیا کہ جرنلسٹ کالونی میںمارچ2013کو عزیز بھٹی ٹاﺅن انتظامیہ کو نقشہ کی منظوری کےلئے درخواست دی۔ انہوں نے کہا کہ ایل ڈی اے سے رجوع کریں۔درخواست گذار کے مطابق انہو ںنے منظوری کےلئے مکان کا نقشہ اہل ڈی اے میں جمع کروایا مگر متعلقہ حکام نے اس سلسلے میں اپنا اختیار تسلیم کرنے سے انکار کر دیا۔حالانکہ لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی ایکٹ1975کے تحت بلڈنگ پلان کی منظوری ان کی ذمہ داری میں شامل ہے۔جبکہ 2010میں ایل ڈی اے نے ایک نوٹیفیکیشن کے زریعے نہر کے دونوں طرف موجود رہائشی سکیموں میں مکانات کی تعمیر کےلئے نقشون کا کنٹرول خود سنبھال لیا تھا۔ اس طرح جرنلسٹ ہاﺅسنگ سکیم ایل ڈی اے کے دائرہ اختیار میں آتی ہے۔درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ فطری انصاف کا تصور بھی یہی ہے کہ محکموں کے سرکاری حکام عوام الناس کے امور نمٹائیں اور ان کے فیصلے کریں۔