کوٹ لکھپت جیل کے 6قیدیوں کا کیس ملٹری کورٹ بھجوادیا‘ ہائیکورٹ میں جواب داخل

کوٹ لکھپت جیل کے 6قیدیوں کا کیس ملٹری کورٹ بھجوادیا‘ ہائیکورٹ میں جواب داخل

لاہور(وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے کوٹ لکھپت جیل سے لاپتہ ہونے والے 7 ملزمان کی بازیابی کے لئے دائر درخواست میں وزارت داخلہ کو فریق بنانے کی اجازت دے دی۔ لاہور ہائیکورٹ کے دو رکنی خصوصی بنچ نے کیس کی سماعت کی۔ درخواست گزار نرگس بی بی نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ 6 ملزمان 11 اپریل سے کوٹ لکھپت جیل سے لاپتہ ہیں جیل حکام رشتہ داروں اور اہل خانہ کو ان تک رسائی دے رہے ہیں نہ ہی ان کے بارے میں آگاہ کیا جا رہا ہے۔ سرکاری وکیل نے جیل سپرنٹنڈنٹ کی جانب سے جواب داخل کراتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ ملزم عبدالروف گجر، شبیر، رفیع اللہ، ہاشم عبداللہ، قاری فرمان اور قاری آصف کے مقدمات کو ملٹری کورٹ بھجوا دیا گیا ہے اور ان ملزموں کو ملٹری حکام کے حوالے کر دیا گیا ہے۔درخواست گزار کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ اس درخواست میں وزارت داخلہ کو فریق بنانے کی اجازت دی جائے۔جس پر عدالت نے وزارت داخلہ کو فریق بنانے کی اجازت دیتے ہوئے کیس کی مزید سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دی۔