لاہور: طلاق دینے سے انکار پر سسرالیوں کا نوجوان پر تشدد، آدھا سر، مونچھیں اور بھنوئیں مونڈ دیں

لاہور: طلاق دینے سے انکار پر سسرالیوں کا نوجوان پر تشدد، آدھا سر، مونچھیں اور بھنوئیں مونڈ دیں

لاہور (نامہ نگار) غازی آباد کے علاقہ میں بیوی کو طلاق دینے سے انکار پر سسرالیوں نے داماد کو شدید تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد آدھے سر کے بال، آدھی مونچھیں اور بھوئیں مونڈھ ڈالیں اور منہ پر کالک مل کر اسے گدھے پر بٹھا کر علاقے کا چکر لگوایا۔ پولیس نے دہشت گردی سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کرکے پانچ ملزمان کو گرفتار کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق غازی آبادکے علاقہ میں دلاور نامی نوجوان کی ساڑھے تین ماہ قبل نسرین کے ساتھ شادی ہوئی تھی۔ شادی کے بعد دلاور اور اس کی بیوی میں جھگڑے ہونے لگے۔ جس پر سسرالیوں نے دلاور سے اپنی بیوی نسرین کو طلاق دینے کا مطالبہ کیا۔ بیوی نسرین کو طلاق دینے سے انکار پر سسرالیوں نے داماد دلاور کو شدید تشدد کا نشانہ بنایا اور استرے سے اس کے سر کے آدھے بال، آدھی مونچھیں اورب ھوئیں مونڈ ڈالیں۔ جس کے بعد داماد دلاور کے منہ پر کالک مل کر اسے گدھے پر بٹھا کر علاقے کا چکر لگوایا۔ پولیس نے اس واقعہ کا دہشت گردی سمیت دیگر سنگین دفعات کے تحت مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی جبکہ پانچ ملزمان کو گرفتار کرکے تشدد میں استعمال ہونے والے آلات بھی برآمد کرلئے ہیں۔ پولیس کے مطابق اس واقعہ میں ملوث دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔