ہائیکورٹ ‘ ماتحت عدلیہ کے ملازمین کی تنخواہوں، مراعات سمیت دیگر معاملات انتظامیہ سے الگ کئے جائیں: جوڈیشل ایکٹوازم پینل

ہائیکورٹ ‘ ماتحت عدلیہ کے ملازمین کی  تنخواہوں، مراعات سمیت دیگر معاملات انتظامیہ سے الگ کئے جائیں: جوڈیشل ایکٹوازم پینل

لاہور(وقائع نگار خصوصی)جوڈیشل ایکٹوازم پینل نے ہائیکورٹ و ماتحت عدلیہ کے ملازمین کی تنخواہوں اور دیگر مراعات اور معاملات کو انتظامیہ سے علیحدہ کرنے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ عدلیہ کو حقیقی معنی میں آزادی دی جا سکے۔اس کے لئے آئین کے آرٹیکل 175 میں ترمیم کر کے یہ اختیار دیا جا ئے کہ  عدلیہ اپنے ججز اور ملازمین کی تنخواہوں اور دیگر مراعات کا تعین کرے۔پینل کے اجلاس میں منظور کی گئی قرار داد میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اسلام آباد ڈسٹرکٹ کورٹ میں ہونے والے سانحہ کے بعد ہماری پولیس وکلائ، ججز اور صحافیوں کو تحفظ دینے میں ناکام ہو چکی ہے لہذا اِن تمام لوگوں کو تحفظ دینے کیلئے سپیشل سیکوریٹی فورس فوری طور پر تشکیل دی جائے اور اْن کو فوری طور پر جدید اسلحہ اور دیگر ہتھیار سیکوریٹی کنٹرول کرنے کیلئے  فراہم کیا جائے۔