لاہور: گھریلو جھگڑوں پر ساہیوال کے نوجوان نے بیوی کو قتل کرکے خودکشی کرلی

لاہور: گھریلو جھگڑوں پر ساہیوال کے نوجوان نے بیوی کو قتل کرکے خودکشی کرلی

لاہور (سٹاف رپورٹر+ نامہ نگاران ) لیاقت آباد میں گھریلو جھگڑوں پر 3 بچوں کے باپ نے بیوی کو قتل کرنے کے بعد سر میں گولی مار کر خودکشی کر لی۔ پیکو روڈ نزد کوآپریٹو سوسائٹی کے قریب ساہیوال کے رہائشی عمران نے چند ماہ قبل کرائے کا گھر لیا تھا اور اسکی 2 بیٹیاں اور ایک بیٹا تھا۔ دونوں میاں بیوی میں اکثر گھریلو معاملات پر جھگڑا رہتا تھا گذشتہ روز عمران کا دوبارہ اپنی بیوی نوشین کیساتھ جھگڑا شروع ہو گیا اور عمران نے گھر میں موجود پسٹل نکال کر فائرنگ شروع کر دی جس سے نوشین موقع پر ہی جاں بحق ہو گئی،بعدازاں عمران نے اپنے سر گولی مار خودکشی کر لی۔کامونکے میں بیرون ملک جانے کی اجازت نہ ملنے پر بی ایس سی کے طالبعلم نے زہریلی گولیاں کھا کر زندگی کا خاتمہ کرلیا۔ نواحی گاؤں کوٹلی نواب  محلہ چراغ والا جمشید بیرون ملک جانے کا خواہشمند تھاتاہم اسکے والدین اس پر راضی نہ تھے گذشتہ روز اس نے اپنے والدین کے اس رویہ سے انکے ساتھ جھگڑا کرتے ہوئے دلبرداشتہ ہوکر زہریلی گولیاں نگل لیں۔ فیروزوالہ گھریلو جھگڑوں پر محلہ احمد پور کے عباس نے زہر نگل لیاجبکہ قصبہ روہڑ ا کے 22 سالہ عظیم نے بھائی سے جھگڑے پر خود کو گولی مار کر خودکشی کرلی۔ علاوہ ازیں فیصل آباد کے چک 365 گ۔ب ظفر اقبال کے گائوں کی طلاق یافتہ خاتون معراج بی بی کے ساتھ تعلقات تھے۔ ظفر اقبال کو شبہ تھا کہ اس کی محبوبہ کے کسی اور شخص سے بھی مراسم ہیں۔ اسی بناء پر اس نے گزشتہ روز فائرنگ کرکے معراج بی بی کو موت کے گھاٹ اتار دیا اور خود کو گولی مار کر اپنی زندگی کا بھی خاتمہ کرلیا۔ ملت ٹائون میں 11 سالہ گھریلو ملازم بچہ بابر گھر کے سربراہ کی ڈانٹ ڈپٹ پر گلے میں رسی کا پھندا ڈال کر پنکھے سے جھول گیا۔اٹھارہ ہزاری کے محمد نواز کی 19 سالہ بیٹی یاسمین نے بھائی سے معمولی جھگڑے پر زہریلی گولیاں کھا کر جان دیدی۔