کمرہ عدالت میں 2 بھائیوں کا قتل، 2 خواتین سمیت 10 ملزم بری

لاہور(اپنے نامہ نگارسے) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے سیشن کورٹ کمرہ عدالت میں قتل کیے جانے والے دو حقیقی بھائیوں کے مقدمہ قتل کا فیصلہ سناتے ہوئے دو خواتین سمیت دس افراد کو بری کرنے کے احکامات جاری کر دیئے۔گزشتہ روز دوران سماعت مقدمہ کی مدعیہ اور مقتولین کی پھوپھی نبیلہ بی بی بطور گواہ منحرف ہو گئی جس پر عدالت نے ملزموں کو بری کردیا۔استغاثہ کے مطابق رخسانہ بی بی،زنیرہ بی بی،ارشد،عاطف، اشرف،زکریا سمیت دس افراد پر الزام تھا کہ انہوں نے 10 ستمبر 2011 ءکو سیشن کورٹ میں کمرہ عدالت میں کمرہ عدالت میں کھڑے دو حقیقی بھائیوں ذیشان اور علی عمران کو فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا تھا۔