اغوا ہونیوالی دو کمسن بہنیں کھاریاں کے جسم فروشی کے اڈے سے بازیاب کرا لی گئیں

اغوا ہونیوالی دو کمسن بہنیں کھاریاں کے جسم فروشی کے اڈے سے بازیاب کرا لی گئیں

لاہورگجرات (سٹاف رپورٹر+ نامہ نگار)لاہور داتا دربار سے اغوا ہونیوالی دو کمسن بہنیں کھاریاں کے جسم فروشی کے اڈے سے بازیاب کرا لی گئیں۔ اڈے سے بھاگنے والی لڑکی کی اطلاع پر پولیس نے چھاپہ مار کر دو نائےکہ سمیت 4ملزم حراست میں لے لئے۔ تفصیل کے مطابق پولیس نے کھاریاں کے مکان میں چھاپہ مار کر کئی برس سے فحاشی کا اڈا چلانے والی خاتون ثناءکے قبضہ سے دو کمسن بہنوں 15 سالہ منزہ اور 12 سالہ کنزیٰ کو بازیاب کرا لیا جبکہ دو خواتین اور دو مردوں ثنائ، شازیہ، امانت اور خرم کو گرفتار کر لیا۔ پولیس کے مطابق دونوں بہنوں کو چار ہفتے قبل امانت سندھو اور اختر علی ساکن منڈی بہا¶الدین نے داتا دربار سے اغوا کے بعد کھاریاں میں ثنا کو 50 ہزار کے عوض فروخت کردیا اور گرفتار ملزم امانت لاہو ر میں رکشہ چلا کر لڑکیوں کو اغوا کرتا اور جسم فروشی کے اڈوں پر فروخت کرتا تھا جبکہ خرم اڈے سے بھاگنے کی کوشش کرنیوالوں کو سزا ئےں دیتا تھا۔سی آئی اے پولیس نے گجرپورہ کے رہائشی رکشہ ڈرائیور محمد عنصر نامی شہری کی بیٹی ملائکہ عنصر کو اغوا کرنے والے گروہ کی سرغنہ یاسمین عرف کزن سمیت 2 ملزمان کو گرفتار کر کے ان کے قبضے سے مغویہ ملائکہ عنصر کو بازیاب کرا لیا ہے۔ مغویہ کو اپنے دیگر 2 ساتھیوں محمد صدیق عرف صدیقا اور منیر احمد ولد محمد حسین کے ساتھ مل کر اغوا کیا تھا۔ ایس ایچ او نوانکوٹ انسپکٹر شریف سندھو نے سبزہ زار B بلاک کے علاقہ میں چھاپہ مار کر 1 ملزم مہر محمد اشرف عرف پیڑی کو گرفتار کر لیا