سی سی پی او کا اردل روم‘ تھانیداروں سمیت 27 اہلکاروں کو سزائیں

لاہور (اپنے نمائندے سے) سی سی پی او لاہور امجد جاوید سلیمی نے اردل روم میں مختلف پولیس اہلکاروں کی اپیلوں پر فیصلہ کرتے ہوئے کانسٹیبل محمد آصف اور حسن مرتضیٰ کو برطرف کر دیا جبکہ دیگر 27 پولیس اہلکاروں کو مختلف سزائیں دیں۔ تفصیلات کے مطابق اردل روم میں سی سی پی او نے 35 ہزار روپے رشوت لینے پر سب انسپکٹر اشرف کی تنزلی کے خلاف اپیل کو مسترد کرتے ہوئے سزا بحال رکھی۔ اسی طرح ٹریفک وارڈن انور سلطان‘ ناظم علی‘ عامر‘ رمضان کی مختلف سزاوں کے خلاف معافی کیلئے کی گئی اپیلوں کو مسترد کر دیا جبکہ ٹریفک وارڈن صبح صادق‘ عابد محمود اور نوید ارشد کی ایک ایک سال سروس ضبطگی کی سزاوں کو سنشور اور 11 دن کی بنیادی تنخواہ کے برابر جرمانے میں تبدیل کر دیا۔ سی سی پی او نے سابقہ چوکی انچارج سب انسپکٹر شہزاد کمال کی برطرفی کی سزا کو ایک سال کی سروس ضبطگی میں تبدیل کرتے ہوئے بحال کر دیا جبکہ سب انسپکٹر محمد افضل کی تنزلی کی سزا بھی ایک سالکی سروس ضبطگی میں تبدیل کر دی گئی۔ سی سی پی او نے کانسٹیبل انعام اللہ کی برطرفی کو ختم کرتے ہوئے بحال کر دیا جبکہ ٹریفک وارڈن ذیشان یوسف‘ فیصل سرور‘ توفیق‘ رضوان کی سزاوں کو سنشور میں تبدیل کر دیا جبکہ ٹریفک وارڈن فصیح الرحمن‘ حاجی عمران‘ اسد شاہ اور لیڈی ٹریفک وارڈن شائستہ مبین کو مختلف الزامات کے تحت دی جانے والی سزائیں بھی ختم کر دیں۔ سی سی پی او نے انسپکٹر محمد امین کو انکوائری کئے بغیر ملزم چھوڑنے پر 2 سال کی سروس ضبط کرنے کی سزا دی۔