شیخوپورہ میں 2 خواتین، حافظ آباد میں دسویں کے طالب علم سے زیادتی

شیخوپورہ +حافظ آباد (نامہ نگار خصوصی + نمائندہ نوائے وقت) شیخوپورہ میں 2 خواتین، حافظ آباد میں طالب علم سے زیادتی کی گئی۔ نوکری کی تلاش میں نکلنے والی لڑکی (ن) کو دودھ پیک کرنے والی فیکٹری کے ملازم نے نوکری دلوانے کا جھانسہ دیکر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا، ہائوسنگ کالونی پولیس نے ملزم جمشید سیال کے خلاف مقدمہ درج کرکے اس کی تلاش شروع کردی ہے، ملزم کو اس کارروائی میں اپنے دو ساتھیوں کی مدد بھی حاصل تھی۔ تھانہ سٹی بی ڈویژن کے علاقہ نہری کالونی میں محنت کش عبدالرشید کی بیٹی (م) سے نوجوان سجاد نے زیادتی کی۔ ملزم کو اپنے چار ساتھیوں کی مدد حاصل تھی دو ملزمان کو پولیس نے حراست میں لے لیا ہے۔ حافظ آباد کے نواحی گائوں جوریاں میں طالب علم کو دو اوباش نوجوانوں نے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا، ملزمان نے ویڈیوبنا کر انٹر نیٹ اور فیس بک پر اپ لوڈ کر دی، ایک ملزم کو گرفتار کر لیا۔ ذوالفقار کا بیٹا دائود الحسن گورنمنٹ ہائی سکول جوریاں میں دسویں جماعت میں زیر تعلیم ہے۔ دائود چند روز قبل سکول سے واپس گھر جا رہا تھا کامران اور عثمان نے زیادتی کر ڈالی۔ پولیس نے ملزم عثمان کو گرفتار کر لیا جبکہ ملزم کامران تاحال فرار ہے۔