حادثے کے مرتکب ڈرائیور کو چھوڑنے پر زخمی شہری کے ورثاء کا مظاہرہ ، روڈ بلاک

لاہور (نامہ نگار)فیکٹری ایریا کے علاقہ میں شہری نور کو ٹکر مار کر شدید زخمی کرنے والے ٹریکٹر ٹرالی کے ڈرائیور کو مبینہ طور پر رشوت لے کر چھوڑنے پر اس کے ورثاء اور اہل علاقہ کی بڑی تعداد نے فیروز پور روڈ بلاک کر کے پولیس کے خلاف شدید احتجاج چمن سے گاڑیوں کی قطاریں لگ گئیں۔ زخمی نور کے ورثاء نے کہا کہ چند روز قبل مقامی ماربل فیکٹری کے باہر ٹریکٹر ٹرالی کے ڈرائیور نے فیکٹری ملازم نور کو کچل کر زخمی کر دیا۔ جس سے نور کو بازو ٹانگیں اور ریڑھ کی ہڈی ٹوٹ گئی۔ ڈرائیور کو مقامی افراد نے قابو کر کے پولی سکے حوالے کر دیا۔ زخمی نور تا حال ہسپتال میں موت و حیات کی کشمکش میں پڑا ہے مگر تھانیدار شوکت نے 10ہزار روپے رشوت لے کر ملزم فریکٹر ٹرالی کے ڈرائیور کو چھوڑ دیا۔ زخمی نور نے تھانہ فیکٹری ایریا میں پہنچ کر تھانیدار کے اس رویے کے خلاف احتجاج کیا لیکن پولیس پر اثر نہیں ہوا۔ مظاہرین نے وزیر اعلیٰ شہباز شریف سے مطالبہ کیا کہ وہ ان کی داد رسی کریں اور شوت لینے والے تھانیدار کے خلاف انکوائری کی جائے۔ تا ہم دو گھنٹے احتجاج کرنے کے بعد مظاہرین منتشر ہو گئے۔