پارلیمنٹ کے درو دیوار چینی صدر شی جن پنگ کے استقبال کیلئے چشم براہ ہیں

  پارلیمنٹ کے درو دیوار چینی صدر شی جن پنگ کے استقبال کیلئے چشم براہ ہیں

 پیر کی شام قومی اسمبلی کا 21واں سیشن شروع ہو گیا ہے جب کہ سینیٹ کا اجلاس غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی ہو گیا  پیر کو پارلیمنٹ کے درو دیوار چینی صدر کی اسلام آباد میں موجودگی کی گواہی دے رہے تھے، شاہراہ دستور پر کئے جانے والے حفاظتی انتظامات کی زد میں ارکان پارلیمنٹ بھی آگئے۔ شاہراہ دستور پر پاکستان اور چین کے پرچموں کی بہار ، پاکستانی و چینی قیادت کی قد آدم تصاویر اور تزئین و آرائش میں چینی ثقافت کی عکاسی چینی صحافیوں کے لئے متاثر کن تھی، پارلیمنٹ کی غلام گردشوں میں ’’پاک چین دوستی‘‘ موضوع گفتگو بنی ہوئی تھی پاک چین دوستی زندہ باد کے نعروں  کی گونج  پاکستان کے دورے پر آنے والے چینی مہمانوں کے لئے یہ منظر کچھ نیا اور حیران و ششدر کر دینے والا تھا  پاکستان کی سیاسی تاریخ میں پہلی  بار چین پاکستان کے ساتھ اقتصادی  ترقی اور توانائی کے معاہدوں پر دستخط کئے۔ وفاقی وزراء اور وزرائے مملکت کی ایوان سے مسلسل غیر حاضری پر دل برداشتہ ہو کر  پارلیمانی امور کے وزیر مملکت اور مسلم لیگ (ن) کے چیف وہیپ شیخ آفتاب احمد نے  وزارت  سے مستعفی ہونے کی دھمکی دے دی۔ مولانا فضل الرحمن نے  حکومت کی جانب سے پاک چین اقتصادی راہداری کی اصل نقشے کے تحت تعمیر کے اعلان کو خوش آمدید  قرار دیا ہے  حالیہ بریفنگ میں بلوچستان اور خیبرپختونخوا کے اراکین پارلیمنٹ نے اطمینان کا اظہار کیا ہے۔