طاہر القادری: الطاف حسین کا ’ڈرون‘!

کالم نگار  |  خالد احمد

 پاکستانی برقیاتی ذرائع ابلاغ کل رات بھی جنابِ الطاف حسین کے فرستادہ’ ڈرون‘کی مائیت کا تذکرہ کرتے رہے! مگر کسی نے متحدہ قومی موومنٹ کے سربراہ کی جانب سے سپریم کورٹ آف پاکستان سے غیرمشروط معافی کا ذکرتک کرنا پسند نہیں کیا! حالانکہ یہ’معافی‘ بھی کسی ڈرون حملے سے کم تہلکہ خیز نہیں تھی! بیشتر تجزیہ نگار الطاف بھائی سے کہیں زیادہ مہلک اسلحہ بردار تجزیہ نگاروں سے خائف نظر آ رہے تھے!’میڈیا آزاد ہو گیا ہے!‘، یہ اطلاع ہم تک برقیاتی ذرائع ابلاغ کے وسیلے سے پہنچی !اور کل رات تک بار بار پہنچتی رہی! مگر، متحدہ قومی موومنٹ کا ذکر آتے ہی ’ڈھاک کے وہی تین پات‘ سامنے آ جاتے! جنابِ رحمن ملک لندن سے لوٹے،تو، سیدھے جنابِ طاہر القادری کی مجلس میں جا بیٹھے! جنابِ طاہر القادری نے اُنہیں دیکھتے ہی بمکارکے کہا ،‘ لانگ مارچ ہر صورت میں ہو گا!‘ ،تو، جنابِ رحمن ملک نے دست بستہ ہوکر عرض کی کہ اعلیٰ حضرت میں آپ کو روکنے نہیں آیا!میں،تو، بس آپ یہ بتانے آیا ہوں کہ طالبان آپ کی جان کے پیچھے پڑ چکے ہیں! جنابِ طاہر القادری نے یہ وحشت اَثر خبر سنی اَن سنی کر دی! کیونکہ اُن کا خیال تھا کہ جنابِ رحمن ملک اُنہیں صرف ’ڈی ریل‘ کرنے کی نیت سے آئے ہیں! اوراگر انہوں نے اس خبر پر کوئی ردعمل ظاہر کر دیا،تو، اُن کے مرید شرمندگی کے مارے منہ چھپانے کے لیے جگہ ڈھونڈتے ڈھونڈتے اس دُنیا سے بہت دور چلے جائیں گے! جہاں ’بندہ نہ بندے دی ذات‘ ہو گی! اور وہ’ڈی ریل‘ ہوکر ’شیخ الاسلام‘ کی جگہ نہ جانے کس نام سے پکارے جانے لگیں؟ ’شیخ الاسلام‘ پر ’ منہاج القرآن ہیڈ کوارٹرز‘کی تعمیر میں قواعد و ضوابط سے روگردانی کے سبب 15 کروڑ روپے کا جرمانہ عائد ہو جانے کی خبر عام ہو رہی ہے! تفصیلات کے مطابق ’منہاج القرآن کے ہیڈ کوارٹرز‘ کا نقشہ صرف ایک منزل پر مشتمل تھا! اور یہی نقشہ پاس کروایا گیا تھا! مگر، اس پر اضافی منزلیں ڈال لی گئیں! اُدھر خیبر پی کے اسمبلی میں طاہر القادری کے خلاف متفقہ قرارداد منظور کرلی گئی ہے! اسمبلی کے مطابق کچھ قوتیں جمہوری بساط لپیٹنا چاہتی ہیں! اور انتخابی اصلاحات کا مطالبہ کرکے عام انتخابات ملتوی کرنے کا جواز پیدا کر رہی ہیں! پنجاب کے وزیر اعلیٰ جنابِ شہباز شریف نے بھی امپورٹڈ ایجنڈا لے کر پاکستان آنے والوں کو واضح الفاظ میں بتا دیا ہے کہ سرکاری خزانے سے سردرد کی گولی نہ لینے کی مثال دے کر قوم کو دھوکا نہیں دیا جاسکتا! لندن سے آنے والی تازہ ترین اطلاعات کے مطابق جنابِ الطاف حسین کا خود ساختہ ’ڈرون‘ کچھ ’فنی خرابیاں‘ طلوع ہو جانے کی بنا پر اپنی موعودہ ’تجرباتی پرواز‘غروب کر بیٹھا ہے!لندن نشیں تحریکی بھائی لوگوں کی دن رات کی محنت رنگ لے آئی ،تو، توقع کی جاسکتی ہے کہ یہ حملہ دو، یا، تین دن کی تاخیر کے ساتھ پاکستان میں اپنے ہدف کی طرف بھیج دیا جائے گا! اس حملے کے نتیجے میں دشمنوں کے ساتھ ساتھ کتنے بے گناہ شہری بھی جان سے جائیں گے؟ اس امر کا تخمینہ لگایا جا چکا ہے! لیکن اس کا اعلان کچھ ’تکنیکی وجوہ‘ کی بنا پر عام نہیں کیا جا رہا!