داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ: 10 عالمی کمپنیوں نے تجاویز واپڈا کو ارسال کر دیں

لاہور (نیوز رپورٹر) داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کیلئے ایک اہم پیش رفت کے طور پر عالمی سطح پر معروف 10 کمپنیوں اور جوائنٹ ونچرنے پراجیکٹ کے مین ڈیم کیلئے اپنی تجاویز واپڈا کو جمع کرادی ہیں۔ اِن ہی کمپنیوں میں سے 8 نے زیرِزمین پاور کمپلیکس کی تعمیر کیلئے بھی اپنی تجاویز ارسال کی ہیں۔ بعض کمپنیوں نے مین ڈیم اور پاور کمپلیکس کی تعمیر کیلئے فنڈز کا انتظام کرنے کا بھی عندیہ دیا ہے۔ بین الاقوامی کمپنیوں کی جانب سے یہ رسپانس واپڈا اور پاکستان کے ہائیڈرو پاور سیکٹر پر اعتماد کا بھی مظہر ہے۔ تجاویز جمع کرانے والی کمپنیوں میں سے 4 کا تعلق ترکی، 3 کا چین، ایک کا اٹلی، ایک کا کوریا جبکہ ایک کا تعلق ویت نام سے ہے۔ ارسال کی جانے والی تجاویز کی جانچ پڑتال کا عمل شروع کر دیا گیا ہے، جس کی تکمیل کے بعد کوالی فائی کرنے والی کمپنیوں اور جوائنٹ ونچرز کو بِڈ ڈاکومنٹس جاری کئے جائیں گے۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کی تعمیر کیلئے ایک نیا میکانزم اختیار کیا گیا ہے۔ پراجیکٹ کے اطلاق کیلئے اس میکانزم کی کامیابی سے پانی اور پن بجلی کے شعبوں کے اہم اور بڑے منصوبوں بشمول دیامر بھاشا ڈیم، بونجی، پٹن اور تھاکوٹ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کی جلد تعمیر کیلئے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔