سال 2009ء دنیا کی اقتصادیات کیلئے حقیقی کساد بازاری اور شدید مندی کا سال ثابت ہو گا۔ آئی ایم ایف

نیویارک (اے پی پی) عالمی مالیاتی فنڈ نے خبردار کیا ہے کہ سال 2009ء دنیا کی اقتصادیات کیلئے حقیقی کساد بازاری اور شدید مندی کا سال ثابت ہو گا کیونکہ بڑے اثاثوں میں پھنسے ہوئے دو کھرب امریکی ڈالر کی وجہ سے عالمی مالیاتی نظام کا پہیہ جام رہے گا۔ جمعرات کو واشنگٹن میں نیوز کانفرنس کے دوران آئی ایم ایف کے چیف اکنانومسٹ اولیورکانکرڈ نے عالمی اقتصادی صورتحال کے حوالے سے دو الگ الگ رپورٹس پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس سال عالمی معیشت میں صرف اعشاریہ پانچ فیصد اضافہ ہو گا جو دوسری عالمی جنگ کے بعد معاشی ترقی کی کم ترین رفتار ہو گی۔ اس سے پہلے نومبر میں آئی ایم ایف نے پیشنگوئی کی تھی کہ 2009ء میں اقتصادی شرح نمو 2.2 فیصد رہے گی جو غلط ثابت ہوئی۔ اولیورکانکرڈ نے مزید کہا کہ ترقی یافتہ معیشتوں کو اس سال شدید تر کساد بازاری کا سامنا کرنا پڑے گا۔