رمضان‘ اتوار بازاروں میں دوسرے درجہ کی سبزیاں اور پھلوں کی مہنگے داموں فروخت

رمضان‘ اتوار بازاروں میں دوسرے درجہ کی سبزیاں اور پھلوں کی مہنگے داموں فروخت

لاہور (خبر نگار) اتوار اور رمضان بازاروں میں خریداروں کا رش کم ہوگیا۔ مگر پھلوں اور سبزیوں کی قیمتوں میں کمی کی بجائے اضافہ ہوگیا۔ عوام نے ابتدائی رمضان میں ضرورت سے زیادہ خریداری کی جس کی وجہ سے قیمتیں بڑھ گئیں اور خریدار کم ہوجانے کے باوجود قیمتوں میں کمی نہیں ہوئی۔ گزشتہ روز بھی رمضان بازاروں میں اے کیٹیگری کی قیمت میں بی کیٹیگری کے پھل اور سبزیاں فروخت کی جاتی رہیں۔ دکانداروں کا موقف تھا کہ تھو ک میں چیزوں کی قیمت زیادہ ہے وہ کیسے سستی فروخت کریں۔ اتوار بازار میں ادرک 15 روپے اضافہ سے 140 روپے، لہسن دیسی 5 روپے اضافہ سے 85، بینگن 5 روپے اضافہ سے 25، کھیرا 10 روپے اضافہ سے 40، بند گوبھی 10 روپے اضافہ سے 70، کریلے 5 روپے اضافہ سے 35، دیسی ٹینڈے 5 روپے اضافہ سے 25، گھیا توری 5 روپے اضافہ سے 30، لیموں دیسی 10 روپے اضافہ سے 65، سبز مرچ 5 روپے اضافہ سے 55، آلو 2 روپے اضافہ سے 34، پیاز 2 روپے اضافہ سے 37، ٹماٹر 12 روپے کی کمی سے 70، پالک 10 روپے کی کمی سے 20، گھیا کدو 7 روپے کی کمی سے 18 ورپے کلو ہوگیا۔ جبکہ مٹر 110 روپے، شملہ مرچ 55 روپے، لہسن چائنہ 90 روپے اور بھنڈی 40 روپے کی قیمتیں برقرار رہیں۔ پھلوں میں سیب سفید 10 روپے اضافہ سے 80، کیلا اول 2 روپے اضافہ سے 62، خربوزہ 15 روپے اضافہ سے 40، آڑو سپیشل 15 روپے اضافہ سے 105، موٹی خوبانی 20 روپے اضافہ سے 120، آلو بخارہ 10 روپے اضافے سے 130، دیسی انار 10 روپے اضافے سے 90، آم چونسہ 10 روپے اضافہ سے 85 روپے کلو ہوگیا۔ جبکہ سندرخانی انگور 20 روپے کی کمی سے 180 روپے کلو ہوگیا۔ جبکہ ناشپاتی 60، انگور گولہ 100، گرما 60، جامن 40،آڑو دوم 60 کی قیمتیں برقرار رہیں۔