اقتصادی رابطہ کمیٹی نے لاکھوں مزدوروں کو بیروزگاری سے بچا لیا: ملک طاہر جاوید

لاہور (کامرس رپورٹر) اقتصادی رابطہ کمیٹی نے تین سال سے زیادہ پرانی گاڑیوں کی امپورٹ پر پابندی عائد کرکے تیزی سے ترقی کرتی آٹو انڈسٹری کے تین ہزار یونٹوں کو بندش اور ان سے براہ راست اور بلاواسطہ وابستہ لاکھوں افراد کو بے روزگار ہونے سے بچا لیا ہے جس کیلئے نجی شعبہ ڈپٹی پرائم منسٹر اور وزیر صنعت چودھری پرویز الٰہی اور وزیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کا شکریہ ادا کرتا ہے اپنے بیان میں لاہور چیمبر کے سابق سینئر نائب صدر پیاف کے ایگزیکٹو ممبر اور آٹو انڈسٹری کے ممتاز رہنما ملک طاہر جاوید نے فیصلہ کو قابل تحسین قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ تین سال سے زیادہ پرانی گاڑیوں کی امپورٹ آٹو انڈسٹری بند کرنے کے مترادف تھی۔ پالیسی میں یک لخت بڑی تبدیلی سے سوا سال کے عرصہ میں 70000 پرانی گاڑیاں ملک میں آچکی ہیں جس سے آٹو انڈسٹری کو 32 ارب روپے کا نقصان پہنچا ہے حکومتی خزانہ کو جو بھاری نقصان ہوا وہ اس کے علاوہ ہے۔