سٹاک مارکیٹ میں شدید مندا سے چھوٹے سرمایہ کاروں کی کمر ٹوٹ گئی : جماعت اسلامی

لاہور (خصوصی رپورٹر) امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے پاکستان سٹاک مارکیٹ میں صرف ایک ہفتے کے دوران سرمایہ کاری مالیت 2 کھرب 6 ارب روپے کم ہونے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملکی معیشت غیر یقینی صورتحال کا شکار ہے ایک طرف سرمایہ کار مختاط ہوکر بیشتر حصص اونے پونے فروخت کرنے پر مجبور ہیں جبکہ دوسری جانب چھوٹے سرمایہ کاروں کی کمر ٹوٹ گئی ہے برطانوی عوام کا یورپی یونین چھوڑنے کے حق میں فیصلے پر پاؤنڈ کی شرح میں کمی ہوئی ہے جو کہ پاکستانی ایکسپورٹ کیلئے خطرے کاباعث ہو سکتا ہے ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت پاکستان متوقع صورتحال سے نمٹنے کیلئے فوری اقدامات کرے انہوں نے کہا کہ حکومت اس وقت بغیر وزیراعظم چل رہی ہے عوام کا کوئی والی وارث نہیں حکومتی نمائندے بھی صرف ٹی وی ٹاک شوز میں نظر آتے ہیں جبکہ عملاً عوام کو کوئی ریلیف نہیں ملا اور وہ مسائل کے ہاتھوں تنگ آ چکے ہیں ستم ظریفی یہ ہے کہ ہرشعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والا شخص حکومتی کارکردگی سے مایوس اور سراپا احتجاج ہے صرف پنجاب میں حکمرانوں کے خلاف چار ہزار سے زائد احتجاجی مظاہرے ہو چکے ہیں حکومتی ناقص پالیسیوں کی بدولت ملک میں بے روزگاری بڑھ رہی ہے ہر ماہ 2 سو سے زائد افراد کی خود کشیاں حکمرانوں کی بدترین کارکردگی کا مظہر ہے۔