مالی مشکلات‘آئی ایم ایف کی شرائط ۔۔۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ کیلئے گرانٹ میں کمی کا فیصلہ

اسلام آباد (آن لائن) حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں دہشت گردی کیخلاف جنگ کیلئے مجوزہ گرانٹ 185ارب سے کم کرکے 120 ارب کردی یہ فیصلہ مالی مشکلات اور آئی ایم ایف کی شرائط کے مطابق بجٹ خسارے میں کمی لانے کیلئے کیا گیا ہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال میں دہشت گردی کیخلاف جنگ کیلئے 125 ارب کی گرانٹ مختص کی گئی تاہم عسکریت پسندی کے بڑھتے ہوئے خطرے، خود کش حملوں اور سرکاری تنصیبات پر دہشت گردوں کے حملوں کے پیش نظر حکومت نے یہ رقم بڑھا کر 154ارب کردی۔ ان کے مطابق آئندہ مالی سال 2010-11ءکے بجٹ سٹرٹیجی پیپر ون میں دہشت گردی کیخلاف جنگ کی گرانٹ بڑھا کر 185 ارب کرنے کی تجویز دی گئی تاہم وزارت خزانہ کے حتمی بجٹ سٹرٹیجی پیپر 2 میں گرانٹ کی رقم کم کرتے ہوئے 120 ارب کردی گئی ہے۔ رواں سال 343 ارب کے دفاعی اخراجات میں مزید 60 ارب کا اضافہ کرنا پڑا رپورٹ کے مطابق فرینڈز آف ڈیموکریٹک پاکستان فورم عالمی ایڈ ایجنسیاں، موجودہ حکومت کی توقعات پر پوری نہیں اتر سکیں ٹوکیو کانفرنس میں کئے گئے وعدوں پر تاحال عمل نہیں ہوا جس کے باعث سالانہ ترقیاتی بجٹ کا بڑا حصہ دفاعی اخراجات کی نذر ہوگیا۔