خیبر پختونخوا حکومت نےبڑے ٹیکس نادہندگان کو واجبات کی ادائیگی کے لئے دس روز کی مہلت دی ہے جس کے بعد ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔  

خیبر پختونخوا حکومت نےبڑے ٹیکس نادہندگان کو واجبات کی ادائیگی کے لئے دس روز کی مہلت دی ہے جس کے بعد ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔  

ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کے صوبائی وزیر لیاقت شباب نے پشاور میں نیوز کانفرنس کے دوران  کہا کہ دس جون کے بعد بڑے ٹیکس نادہندگان کےوارنٹ گرفتاری جاری کئے جائینگے۔ انھوں نے واضح کیا کہ آئندہ مالی سال کے بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگے گا اور نہ ہی موجودہ ٹیکسوں کی شرح میں اضافے کی کوئی تجویززیرغورہے ۔انکا کہنا تھا کہ پنجاب کے برعکس صوبہ خیبرپختون خوا میں لگژری گاڑیوں کی حوصلہ افزائی کی جائے گی اور ٹیکسوں کی مد میں ان کے مالکان کو مراعات دی جائینگی ۔صوبائی وزیر ایکسائزنے کہا کہ گریڈ سولہ تک کے سرکاری اور غیرسرکاری ملازمین کوپروانشل ٹیکس سے مستثنیٰ قراردیا گیا ہے جبکہ پانچ مرلہ تک کے ذاتی رہائشی مکانات پرواجب الاداتمام بقایا جات بھی معاف کردیئے ہیں ۔انھوں نے کہا کہ ویلیوایڈڈ ٹیکس کے نفاذکا فیصلہ اسمبلی کریگی