عالمی بنک نے قرض کی فراہمی آئی ایم ایف کی تیسری قسط سے مشروط کر دی

اسلام آباد (آن لائن) عالمی بینک نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام اور ہائر ایجوکیشن کمیشن منصوبوں کے لئے 30 کروڑ ڈالرز قرضے کو آئی ایم ایف اور پاکستان کے درمیان تیسری قسط کے لئے مذاکرات کی کامیابی سے مشروط کر دیا ہے۔ عالمی بنک کی طرف سے پاکستان کے لئے قرضوں کا تعطل کافی عرصہ رکنے کے بعد کچھ ماہ قبل شروع ہوا تھا جو ایک بار پھر رکتا ہوا نظر آیا ہے۔ جس کی بنیادی وجہ یہ بتائی جاتی ہے کہ پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مئی میں ہونے والے مذاکرات میں پاکستان کو 84 کروڑ ڈالرز کی تیسری قسط ملنی تھی تاہم آئی ایم ایف کی جانب سے پاکستان کے بجٹ 2009-10 پر تحفظات کے بعد تیسری قسط روک دی گئی ہے۔ جس کے لئے 3 جولائی کو دوبارہ مذاکرات شروع ہو رہے ہیں۔ عالمی بنک نے پاکستان میں تھرکول منصوبے کے لئے بھی 8 کروڑ ڈالرز قرض فراہم کرنا تھا اس کی منظوری بھی نہیں دی جا رہی۔ آئی ایم ایف کے ڈپٹی کنٹری ڈائریکٹر سعید الحسن نے کہا ہے کہ پاکستان کے لئے قرض کے اجراء کو آئی ایم ایف کے ساتھ لنک کرنا ہماری داخلی مجبوری ہے۔
ورلڈ بنک