چین نے مطالبہ کیا ہے کہ امریکہ ہائی ٹیکنالوجی آلات کی برآمد پرعائد پابندیاں ہٹائے جبکہ امریکی حکام کا کہنا ہے کہ چین کی جانب سے کرنسی مالیت میں اضافے کا فیصلہ خوش آئند ہے۔

چین نے مطالبہ کیا ہے کہ امریکہ ہائی ٹیکنالوجی آلات کی برآمد پرعائد پابندیاں ہٹائے جبکہ امریکی حکام کا کہنا ہے کہ چین کی جانب سے کرنسی مالیت میں اضافے کا فیصلہ خوش آئند ہے۔

چین اور امریکہ کے درمیان سٹرٹیجک مذاکرات بیجنگ کے معروف گریٹ ہال میں جاری ہیں۔ دو روزہ مذاکرات میں امریکی وفد کی قیادت وزیر خارجہ ہیلری کلنٹن کررہی ہیں۔ اوبامہ انتظامیہ نے چین کے ساتھ معیشت، دفاع، ٹیکنالوجی اورعالمی امورپر تبادلہ خیال کے لیے دو سو افراد پرمشتمل وفد بھیجا ہے۔ چین کے نائب وزیراعظم وانگ کیشانگ نے اس موقع پر کہا کہ امریکہ کی جانب سے ہائی ٹیکنالوجی آلات کی برآمدات پر پابندی سے چینی کمپنیوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ ادھر امریکی سیکرٹری خزانہ ٹموتھی گیتھنر نے چین کی جانب سے کرنسی مالیت میں اضافے کے اعلان کو خوش آئند قرار دیا ہے۔ امریکہ کی کوشش ہے کہ چین کو کرنسی کی قدر میں اضافے پر راضی کیا جائے جبکہ شمالی کوریا کے خلاف کارروائی اور ایران پر پابندیوں کے حوالے سے اس کی حمایت حاصل کی جائے۔ ان مذاکرات میں دونوں ممالک کے درمیان علاقائی وعالمی امور، باہمی تعلقات اور دہشت گردی کے خلاف جنگ سمیت دیگر اہم معاملات بھی زیر بحث آئیں گے۔