معیشت کی بحالی کےلئے مارکیٹ بیسڈ اکنامک ماڈل ضروری ہے: لاہور چیمبر

لاہور (کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر فیصل اقبال شیخ نے کہا ہے کہ معیشت کی بحالی کے لیے مارکیٹ بیسڈ اکنامک ماڈل اشد ضروری ہے اور اس کے لیے مکینزم نجی شعبے کی مشاورت سے ہی مرتب کیا جاسکتا ہے۔ وہ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں اکنامک مینجمنٹ آف پاکستان\\\"کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کررہے تھے۔ کیپیٹل مینجمنٹ کراچی کے چیئرمین محمد مظفر کے علاوہ دیگر مقررین نے بھی سیمینار سے خطاب کیا اور مختلف معاشی امور پر اظہار خیال کیا۔ فیصل اقبال شیخ نے کہا کہ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ملک کی معاشی بہتری کے لیے بھرپور کوششیں کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاشی بحالی کے لیے تمام سٹیک ہولڈرز سے مشاورت اور معاملات میں ان کی شمولیت اشد ضروری ہے۔ جب تک پبلک اور پرائیویٹ سیکٹر مل کر کام نہیں کریں گے تب تک معاشی بحالی ایک خواب ہی رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ بطور قوم اگر ہم ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنا چاہتے ہیں تو ہمیں ایڈہاک ازم کا خاتمہ کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری تمام سیاسی جماعتوں کی مشاورت سے پندرہ سالہ معاشی ایجنڈے کو حتمی شکل دے رہا ہے جو معاشی پالیسیوں کے تسلسل کو یقینی بنائے گا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے چیئرمین کیپیٹل مینجمنٹ کراچی محمد مظفر نے کہا کہ مارکیٹ بیسڈ اکنامک ماڈل پر توجہ دینا ہی ملکی مفاد میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ غربت میں خاتمے کے لیے ضروری ہے کہ اکنامک مینجمنٹ کے تحت براہ راست اور بالواسطہ ٹیکسوں میں توازن قائم کیا جائے۔