پاک سری لنکا آزاد تجارتی معاہدے پر مکمل عملدرآمد ضروری ہے: زرداری

پاک سری لنکا آزاد تجارتی معاہدے پر مکمل عملدرآمد ضروری ہے: زرداری

اسلام آباد (اے پی پی) صدر زرداری نے پاکستان اور سری لنکا کی کاروباری برادری اور ایوان ہائے تجارت پر زور دیا ہے کہ وہ دستیاب تجارتی سہولیات کو بھرپور انداز سے بروئے کار لاکر دونوں ممالک کی مختلف شعبوں میں تجارتی اور کاروباری صلاحیت سے زیادہ سے زیادہ استفادہ کے لئے اپنا اہم کردار ادا کریں، مالیاتی و بینکاری شعبہ، سائنس اینڈ ٹیکنالوجی، دفاع، زراعت، سیاحت، قیمتی پتھروں اور زیورات سمیت مختلف شعبہ جات میں وسیع تر تجارت سے موجودہ تجارتی حجم کو بآسانی دو ارب ڈالر تک پہنچایا جاسکتا ہے۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار سری لنکا کے وزیربرائے خارجہ امور جی ایل پیریز سے گفتگو میں کیا۔ ملاقات میں پاک سری لنکا دوطرفہ تعلقات اور باہمی دلچسپی کے علاقائی و بین الاقوامی امور پر تبادلہ خیال ہوا۔ صدر نے کہاکہ پاکستان سری لنکا کے ساتھ تجارتی واقتصادی روابط کو متنوع بنانے اور مزید وسعت دینے کا خواہاں ہے۔ صدر نے دوطرفہ جامع اقتصادی شراکت داری معاہدے کو جلد حتمی شکل دینے پر زوردیتے ہوئے کہاکہ اس سے اقتصادی اور کاروباری روابط کو مزید فروغ ملے گا۔ معاہدے پر مکمل عملدرآمد ضروری ہے۔ صدر زرداری سے جمہوریہ کوریا کے سفیر سونگ جونگ ہوان نے بھی ملاقات کی۔
صدر