سیلز ٹیکس، سپیشل ایکسائز ڈیوٹی بڑھنے سے پیکڈاشیاءکی قیمتوں میں27فیصد تک اضافہ، چینی بھی مہنگی ہوگئی

لاہور+ اسلام آباد (کامرس رپورٹر+ ایجنسیاں) وفاقی حکومت کی جانب سے 15فیصد سیلز ٹیکس اور 2.5 فیصد سپیشل ایکسائز ڈیوٹی عائد کئے جانے کے باعث تمام پیکڈ اشیاءکی قیمتوں میں 27فیصد کے قریب اضافہ ہو گیا ہے جبکہ شوگر ملوں نے گذشتہ روز 100کلو چینی کی ایکس مل قیمت میں 130روپے اضافہ کر دیا ہے جس سے اسکی قیمت 6370روپے سے بڑھ کر 6500روپے ہو گئی ہے جبکہ مقامی مارکیٹ میں 100کلو چینی کی بوری کی قیمت 140روپے بڑھ گئی ہے اور اسکا ریٹ 6460روپے سے بڑھ کر 6600روپے ہو گیا ہے۔ پرچون سطح پر بھی ایک کلو چینی کی قیمت 66روپے سے بڑھ کر 67روپے ہو گئی ہے۔ چیئرمین ایف بی آر سلمان صدیق نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کے کہنے پر ٹیکس پر استثنیات ختم کر رہے ہیں۔ جنرل سیلز ٹیکس کی استثنیٰ برآمدات پر برقرار رہے گی۔ مقامی پروڈکشن چینی پر بھی سیلز ٹیکس کی زیرو ریٹنگ برقرار رہے گی جبکہ مقامی مارکیٹ میں تیار شدہ پراڈکس پر 17فیصد ٹیکس عائد کیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز اپٹما ہاﺅس میں صنعت کاروں کے اجلاس میں کیا۔ زیرو ریٹڈ ٹیکسٹائل انڈسٹری پر 2.5فیصد ایکسائز ڈیوٹی کا بھی اطلاق نہیں ہو گا۔ اس سے ٹیکسٹائل سیکٹر کے 520ارب روپے کے بلاک بھی نہیں ہوں گے۔ انہوں نے کہاکہ پرسوں 23مارچ کو تمام سٹیک ہولڈرز کو اسلام آباد طلب کیا ہے اور ان سے نئے ٹیکسوں کے بارے میں تجاویز لیں جائیں گی۔ انجمن تاجران پاکستان کے صدر محمد اشرف بھٹی اور قومی تاجر اتحاد لاہور کے چیئرمین راجہ حامد ریاض کے مطابق ملوں سے دکاندار تک اشیاءپہنچنے کے دوران ٹیکس کٹوتی کے باعث اشیاءکی قیمتیں 27 فیصد تک مہنگی ہوگئی ہیں، مشروبات، منرل واٹر، کاسمیٹکس، پرفیوم، برانڈڈ کپڑے، کھانے کی پیکڈ اشیاءجن میں دودھ، ڈبل روٹی، مکھن اور دیگر شامل ہیں، کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔ اسی طرح کھاد، ٹریکٹر، زرعی ادویات، بیجوں کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوگیا ہے جس کے باعث گندم کی قیمت گزشتہ سال کی نسبت 25 سے 30 فیصد زائد ہونے کا امکان ہے۔ اسی طرح مقامی مینوفیکچررز نے اپنی گاڑیوں کی قیمتوں میں 30 ہزار روپے تک اضافہ کردیا ہے۔علاوہ ازیں پیر کو وفاقی ادارہ شماریات کے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق کم آمدنی والے طبقہ کیلئے قیمتوں کے حساس اشاریہ (ایس پی آئی) میں 0.08فیصد اور متوسط طبقہ کیلئے 0.01فیصد اضافہ جبکہ بالائی متوسط طبقہ کیلئے 0.10فیصد اور زیادہ آمدنی والے طبقہ کیلئے 0.24فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔ ٹماٹر، چینی، کورے لٹھے، لان کے کپڑے، بڑے گوشت، چاول، دہی، چھوٹے گوشت، جلانے کی لکڑی، دودھ، لہسن، گڑ، کیلے اور گندم کی قیمتوں میں اضافہ ہوا۔ اے پی پی کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے ٹیکس چوروں کے خلاف ملک گیر مہم شروع کر دی ہے جس کے تحت زیادہ آمدنی اور املاک کے حامل افراد کو ایک ماہ کے اندر نیشنل ٹیکس نمبر حاصل کرکے ٹیکس ادا کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے انتباہ کیا گیا ہے کہ بصورت دیگر ان کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔
قیمتوں میں اضافہ