پاکستان‘ انڈونیشیا تجارتی معاہدے سے نئے معاشی دور کا آغاز ہو گا: برہان محمد

لاہور(کامرس رپورٹر) انڈونیشیا کے سفیر ایم برہان محمد (M. Burhan Mohammad)نے کہا ہے پاکستان اور انڈونیشیا کے درمیان ترجیحی تجارت کے معاہدے پر عمل درآمد سے دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی و معاشی تعاون کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا اور پاکستان انڈونیشیا کی مارکیٹ سے زیادہ فائدہ اٹھاسکے گا۔ انہوں نے یہ باتیں لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔ لاہور چیمبر کے نائب صدر میاں ابوذر شاد نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا جبکہ ایگزیکٹو کمیٹی ارکان میاں زاہد جاوید، حسنین رضا مرزا ،احمد حسنین اور خامس سعید بٹ نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ انڈونیشیاکے سفیر نے کہا کہ دوطرفہ تجارت کو فروغ دینے کے لیے ہر ممکن اقدامات اٹھائے جارہے ہیں، انہوں نے بتایا کہ انڈونیشیا کی معیشت کا حجم آسیان ممالک کی مجموعی معیشت کے حجم کا چالیس فیصد ہے اور توقع ہے کہ رواں سال معاشی ترقی کی رفتار مزید تیز ہوگی۔ پاکستان کی انڈونیشیا کو نمایاں برآمدات میں کپاس، میدہ، کاٹن فیبرک، گندم، لیدر اور کاٹن یارن وغیرہ جبکہ درآمدات میں پام آئل، کوئلہ، سلور، پیپر اور سنتھیٹک فائبر وغیرہ شامل ہیں۔