معیاری بیج سے پیداوار 35 فیصد تک بڑھائی جا سکتی ہے: احمد جواد

معیاری بیج سے پیداوار 35 فیصد تک بڑھائی جا سکتی ہے: احمد جواد

اسلام آباد (اے پی پی) ہارویسٹ کریڈنگ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر احمد جواد نے کہا کہ بیجوں کے معیار کو بہتر بنا کر ایکڑ پیداوار میں 35فیصد تک اضافہ کیا جا سکتا ہے ، فوڈ سیکورٹی کو یقینی بنانے کے حوالے سے بیجوں کی نئی اقسام کیلئے بھاری سرمایہ کاری کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ آبی ذخائر ، نہروں اور ڈسٹری بیوٹریز سے پانی رسنے اور ناہموار کھیتوں اور نکاسی آب کی ناکافی سہولیات کے باعث کاشتکاروں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے، کسانوں کے مسائل کے حل کیلئے فوری اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ زرعی شعبہ کے مسائل کے باعث ہماری فی ایکڑ پیداوار کم ہونے سے برآمدات اور کاشتکاروں کی آمدنی میں کمی ہوئی ، اگر بیجوں کے معیار کو بہتر بنایا جائے تو فی ایکڑ پیداوار میں 35 فیصد تک اضافہ کو یقینی بنایا جا سکتا ہے،کینیڈا اور دیگر یورپی ممالک سے درآمد کئے جانے والے بیجوں سے بہتر پیداوار حاصل ہوتی ہے تاہم انہوں نے کہا کہ درآمدہ بیج بہت مہنگے ہوتے ہیں جس کے باعث کاشتکار مقامی اور سستے بیج خرید کر فصل کاشت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں ہائی برڈبیج تیار کرنے میں مسائل درپیش ہیں اور کاشتکار بھی ان بیجوں کو خریدنے کی استطاعت نہیں رکھتے۔ انہوں نے کہا کہ زرعی شعبہ کی پیداوار میں اضافہ کیلئے حکومت ہائی برڈ بیجوں کی خریداری پر سبسڈی دے ،پانی کی کمی کے باعث بھی شعبہ کی کارکردگی متاثر ہو رہی ہیں کیونکہ توانائی بحران کے باعث وہ بروقت آبپاشی نہیں کر سکتے ۔ انہوں نے بتایا کہ ٹیوب ویلوں سے حاصل ہونے والا 50 فیصد پانی آلودہ ہونے کے باعث بھی فصلوں کی پیداوار متاثر ہو رہی ہے ۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ زرعی شعبہ کے مداخل کی قیمتوں میں ہونے والے اضافے سے بھی شعبہ کی کارکردگی متاثر ہوئی ہے ۔