انتخابی وعدوں اور بجٹ میں کوئی مطابقت نہیں : خالد پرویز

لاہور (پ ر) صدرآل پاکستان انجمن تاجران خالد پرویز نے کہا کہ انتخابی وعدوں اور بجٹ اعداد و شمار میں کوئی مطابقت نہیں ہے۔ بجٹ میں عام استعمال اور چھوٹی اشیاءمثلاً دودھ، مشروبات، چینی، گھی وغیرہ پر ٹیکس عائد کئے گئے ہیں۔ جن سے متوسط اور نچلا غریب طبقہ بری طرح متاثر ہو گا۔ درآمد شدہ بیجوں، کیڑے مار دواﺅں اور کھادوں پر ٹیکس لگنے سے اجناس، پھل اور سبزیوں کے نرخ بڑھیں گے۔ بنکوں سے رقم نکلوانے پر ود ہولڈنگ ٹیکس کی شرح بڑھانے کا نشانہ بھی چھوٹے کاروباری لوگ ہی بنیں گے۔ G.S.Tمیں اضافے سے 30ارب روپے زائد آمدن تو ہو گی مگر سینکڑوں مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے جس طوفان کا سامنا عوام کو کرنا پڑے گا لگتا ہے حکومت کو اس کی کوئی پروا نہیں۔ خالد پرویز نے کہا تعلیم بھی ٹیکس سے بچ نہیں سکی ہے۔ کتابیں، کاپیاں اور قلم بھی سیلز ٹیکس نیٹ میں لانے کی تجویز ہے۔ اس سے تعلیم غریب آدمی کی پہنچ سے اور باہر ہو جائے گی۔ پرچون فروش 0.5سے1.0فیصد ٹیکس کی کاغذی کاروائیوں کیونکر پوری کر سکیں گے۔