کراچی اسٹاک ایکس چینج میں تیزی کا رجحان رہاہنڈرڈ انڈیکس پر دو سو چودہ پوائنٹس کے اضافے کے ساتھ کاروبار تینتیس ہزار پانچ سو پچیاسی کی بلند ترین سطح پر بند ہوا

کراچی اسٹاک ایکس چینج میں تیزی کا رجحان رہاہنڈرڈ انڈیکس پر دو سو چودہ پوائنٹس کے اضافے کے ساتھ کاروبار تینتیس ہزار پانچ سو پچیاسی کی بلند ترین سطح پر بند ہوا

کراچی سٹاک ایکس چینج  میں مالیاتی پالیسی میں شرح سود ایک فیصد کمی اور زر ترسیلات میں اضافے کی اطلاعات پر سرمایہ کاروں کی دلچسپی دیکھی گئی،،،کاروبار کا اختتام دو سو چودہ پوائنٹس اضافے کے ساتھ تینتیس ہزار پانچ سو پچیاسی کی بنلد ترین سطح پر ہوا،،،کاروبار کے دوران اڑتیس کروڑ پینتیس لاکھ پچاس ہزار شیئرز  کے ریکارڈ سودے ہوئے،،،جہانگیر صدیقی کمپنی، پاک الیکٹران، ٹی آر جی، پاکستان انٹر نیشنل بلک ٹرمینل، ڈی جی خان سیمنٹ اور میپل لیف سیمنٹ والیوم لیڈر رہے،،، روپے کی قدر میں  آٹھ پیسے کی کمی ہوئی جس کے ساتھ انٹر بینک میں ڈالر سو روپے باسٹھ پیسے پر بند ہوا۔