کراچی سٹاک ایکسچینج میں ایک ہفتے تیزی کے بعد پھر مندے کا رجحان

کراچی+لاہور(این این آئی+کامرس رپورٹر) کراچی سٹاک ایکسچینج،ایک ہفتے تیزی کے بعد ایک بار پھر مندی غالب ۔کاروباری ہفتے کے پہلے روز پیر کوکراچی سٹاک ایکسچینج میں شدید اتار چڑھائو کے بعد مندی رہی اور کے ایس ای 100انڈیکس 6100کی نفسیاتی حد سے گرگیا ، سرمایہ کاری مالیت میں 32ارب 82کروڑ سے زائدکی کمی جبکہ کاروباری حجم جمعہ کی نسبت15.42فیصد کم اور77.27فیصد حصص کی قیمتوں میںکمی ریکارڈ کی گئی، کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہواایک موقع پر کے ایس ای 100انڈیکس 98پوائنٹس اضافے سے 6200کی نفسیاتی حد بھی عبور کرگیا تاہم ایشیائی مارکیٹوں میں مندی اور فروخت کے دبائو کے باعث انڈیکس منفی زون میں آگیا ۔معروف سٹاک بروکر عقیل کریم ڈھیڈھی کا کہنا ہے کہ بینکوں کی طرف سے وہ مدد نہیں آرہی جِس کی ضرورت ہے۔ابھی بھی بینکوں کی طرف سے لوگوں کو قرضے نہیں مل رہے اور جو بینکوں کے شیئر کا مارجن ہے وہ پچاس فیصد ہے۔علاوہ ازیں لاہور سٹاک ایکسچینج میں پیر کو مندی رہی اور ایل ایس ای 25انڈکس 22.95 پوائنٹس کی کمی سے مارکیٹ کے اختتام پر 1632.46 پوائنٹس کی سطح تک پہنچ گیا ہے مجموعی طور پر 112کمپنیوں کا کاروبار ہوا 12کمپنیوں کے حصص میں اضافہ 50 کمپنیوں کے حصص میں کمی جبکہ 50 کمپنیوں کے حصص میں استحکام رہا۔ مارکیٹ میں کل 12753700 حصص کا کاروبار ہوا۔ سب سے زیادہ اضافہ پاکستان پٹرولیم لمیٹڈ کے حصص میں ہوا جسکی قیمت 6.42 روپے بڑھ گئی اور سب سے زیادہ کمی پاکستان اسٹیٹ آئل کے حصص میں ہوئی جسکی قیمت 6.25 روپے کم ہوگئی۔