ملٹی ایئر ٹیرف سے کراچی کے صنعتی شعبے کی ترقی کی رفتار میں کمی واقع ہوگی

کراچی (اسٹاف رپورٹر) نیشنل پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) کی جانب سے اسلام آباد میں منعقد ہونے والی کے الیکٹرک کے ملٹی ایئر ٹیرف کے حوالے سے عوامی سماعت میں کراچی کی تاجر برادری اور مختلف اسٹیک ہولڈرزنے نیپرا کی جانب سے متعین کردہ ملٹی ایئر ٹیرف کے حوالے سے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس ٹیرف سے کراچی کے عوام اور بجلی کی صورتحال پرمنفی اثرات مرتب ہوں گے ۔سماعت کے دوران وفاقِ ہائے ایوان صنعت و تجارت کے نائب صدر، مرزا اشتیاق بیگ نے اپنا موقف بیان کرتے ہوئے کہا کہ ریگولیٹر کی جانب سے متعین کردہ ٹیرف ناصرف کراچی میں بجلی فراہم کرنے والے ادارے کی جانب سے مستقبل میں سرمایہ کاری کومتاثر کرے گا بلکہ شہر میں بجلی کی فراہمی بھی متاثر ہوگی جولوڈشیڈنگ میں اضافے کی صورت میں ظاہر ہوسکتی ہے ۔ایسی صورتحال میں کراچی کی بزنس کمیونٹی کے اندر تشویش پائی جاتی ہے کیونکہ اس سے صنعتی شعبے کی ترقی کی رفتار میں کمی واقع ہوسکتی ہے۔اس سماعت میںبینکنگ سیکٹر کے نمائندوں نے اپنے موقف کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نیپرا اپنے متعین کردہ ٹیرف پر نظر ثانی کرے اورایک ایسا ٹیرف پیش کرے جو پاور یٹیلٹی کو مستقبل میں مزید سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کرے اور کراچی میں بجلی کے نظام کومزید بہتر بنانے کیلئے سودمند ثابت ہو۔