بینکاری نظام میں رقم کی کمی کو پورا کرنے کے لیےاسٹیٹ بینک نے ایک ہفتے کے لیے چار سوچھیالیس ارب پچیس کروڑ روپے فراہم کردیے۔

خبریں ماخذ  |  کامرس رپورٹر
بینکاری نظام میں رقم کی کمی کو پورا کرنے کے لیےاسٹیٹ بینک نے ایک ہفتے کے لیے چار سوچھیالیس ارب پچیس کروڑ روپے فراہم کردیے۔

اسٹیٹ بینک نے بینکاری نظام میں رقم کی کمی دور کرنے کے لیے اوپن مارکیٹ آپریشن کے ذریعےبینکوں اور مالیاتی اداروں کو سات روز کے لیے چار سوچھیالیس ارب پچیس کروڑ روپے فراہم کردیے۔اسٹیٹ بینک کو کمرشل بینکوں نے چار سوچھیالیس ارب پچیس کروڑ روپے ہی کے ٹریثری بلز فروخت کے لیے پیش کیے تھے اور کمرشل بینکوں کی جانب سے پیش کی جانے والی تمام پیشکشکوں کو قبول کرتے ہوئے اسٹیٹ بینک نے بینکوں کو رقم فراہم کی۔اسٹیٹ بینک نے نو اعشاریہ آٹھ دو فیصد شرح سود پر ٹریثری بلز خرید کر بینکوں میں رقم کی کمی دور کی۔ بینکاری ذرائع کا کہنا ہے کہ شرح سود میں کمی کے بعد نجی شعبے اور حکومت کی جانب سے کمرشل بینکوں سے بڑھتے ہوئے قرضے بینکوں میں لیکوڈٹی کی کمی کی سب سے بڑی وجہ بنا ہوا ہے۔