لیسکو انتظامیہ کی غفلت‘ گرڈ سٹیشنز پر نئے ٹرانسفارمرز کی عدم تنصیب کے باعث فورس لوڈشیڈنگ کاخدشہ

لاہور (نیوز رپورٹر) لیسکو انتظامیہ کی عدم توجہ کے باعث 2010ء کے بعد لاہور اور اس کے مضافات میں  نئے ٹرانسفارمرزنصب نہ ہو سکے، جس کے بعد خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ لاہور، شیخوپورہ، اوکاڑہ، ننکانہ اور قصور کے صارفین کوفورس لوڈشیڈنگ  کا سامنا کرنا پڑے گا، بتایا گیا کہ ورلڈ بنک اور ایشین ڈویلپمنٹ بنک نے متعدد بار بجلی کے گرڈ کی استعدادی صلاحیت بڑھانے کیلئے قرض دیا مگر 2010 کے بعد لاہور کے 132 کے وی گرڈ سٹیشن پر 26/20 ایم وی اے اور 40 ایم وی اے استعداد کے تقریباً 30سے 34 ٹرانسفارمرز کی ضرورت تھی مگر فتح گڑھ گلشن راوی، بھوگیوال، شالیمار، باٹا پور، میکلورڈ روڈ، بادامی باغ اور دیگر میں اس استعداد کے پاور  ٹرانسفارمرزنہیں لگے سکے، لیسکو انتظامیہ نے کے ٹینڈرز آرڈر جاری نہیں کئے اور نہ ہی اس کو بنوانے کیلئے ہیوی مکینیکل کمپلیکس اور لاہور کی مقامی کمپنیوں سے رابطے رکھے، جس کے نتیجے میں ٹیکنیکل لاسز پڑیں گے اور ریونیو مزید کم ہو جائے گا، ذرائع کا کہنا ہے کہ اس غفلت پر لیسکو کے اہل انجینئرز نے وزیراعظم سے خود ملنے کا فیصلہ کیا ہے جس میں ذمہ داروں کی نشاندہی کی جائے گی۔