پاکستان اور بھارت میں غیر قانونی تجارت 5 ارب ڈالر سے تجاوز کر گئی: وزارت تجارت

لاہور (اے پی اے ) پاکستان اور بھارت کے درمیان غیر قانونی تجارت کا حجم 5 ارب ڈالر سے تجاوز کر گیا جبکہ قانونی تجارت 2ارب ڈالر کی سطح پر آگئی جس کے باعث کسٹم ڈیوٹی کی مد میں حکومتی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچ رہا ہے۔دبئی، ایران اور افغانستان کے سرحدی علاقوں کے ذریعے بھارت سے پاکستان بڑی مقدار میں اشیا کی تجارت ہو رہی ہے۔ بھارت سے پاکستان تازہ پھل و سبزیاں 54 کروڑ روپے، ٹیکسٹائل مصنوعات 37 کروڑ روپے، آٹو سپیئر پارٹس 26ارب روپے، جیم اینڈ جیولری 8 ارب 80 کروڑ روپے، کاسمیٹکس 4 ارب 80 کروڑ روپے، ادویات 5 ارب 90 کروڑ روپے،ٹوبیکو 4 ارب 40 کروڑ روپے، ہربل پراڈکٹس 11 کروڑ 40 لاکھ روپے اور سپیشل ہربل مصنوعات 96 کروڑ روپے کی منگوائی جاتی ہیں۔ وزارت تجارت کے ذرائع کے مطابق 2008ءمیں کل پاک بھارت تجارت 1 ارب 70 کروڑ 57 لاکھ ڈالر کی ہوئی جس میں پاکستان کی بھارت کو ایکسپورٹ 26 کروڑ30 لاکھ روپے اور امپورٹ 1 ارب 44 کروڑ30 لاکھ امپورٹ کی گئی۔