زرعی سائنسدانوں نے غذائی بحران پر قابو پانے کیلئے نئی ٹیکنالوجی دریافت کرلی

فیصل آباد (اے پی پی) جامعہ زرعیہ فیصل آباد کے ماہرین نے غذائی بحران پر قابو پانے کیلئے ایک نئی ٹیکنالوجی دریافت کر لی جس کے ذریعے ناقابل کاشت اراضی پر کم پانی، کم وسائل اور کم خرچ کے ذریعے جو کی فصل بوکر کسان معاشی طور پر خوشحال ہو سکیںگے ۔ زرعی یونیورسٹی فیصل آباد کے ممتازسائنسدان ڈاکٹر محمد اعجاز تبسم نے بتایا کہ پاکستان کا 60لاکھ ہیکٹر رقبہ کلر اور شور زدہ ہونے کے باعث ناقابل کاشت ہے۔ جامعہ زرعیہ کے سائنسدانوں نے ایک نئی ٹیکنالوجی دریافت کی ہے جس کے ذریعے جو (Barley)کی فصل پر تجربات کے ذریعے یہ مشاہدہ کیا گیا ہے کہ جو میں ایسی قوت مدافعت موجود ہے جس کی وجہ سے اسے ہر طرح کی زمین پر باآسانی کاشت کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جو کی فی ایکٹر کم سے کم پیداوار 20من ہوتی ہے۔ اس لحاظ سے اگر اسے کلر اور شور زدہ زمینوں پر کاشت کیا جائے تو اس سے کم از کم 150ملین ٹن پیداوار حاصل ہو سکتی ہے جو ملک میں گندم کی کل پیداوار سے ساڑھے چھ گنا زائد ہے ۔