کراچی اور لاہور کی سٹاک مارکیٹیں مندے کا شکار‘ سرمایہ کاری میں 3 ارب سے زائد کمی

کراچی اور لاہور کی سٹاک مارکیٹیں مندے کا شکار‘ سرمایہ کاری میں 3 ارب سے زائد کمی

کراچی‘ لاہور (کامرس رپورٹر) کراچی اسٹاک ایکس چینج میں دو روزہ تیزی کے بعد کاروباری ہفتے کے چوتھے روزجمعرات کو اتارچڑھاو¿ کے بعد مندی رہی تاہم کے ایس ای100انڈیکس 22100کی نفسیاتی حد پر مستحکم رہا۔سرمایہ کاری مالیت میں3ارب4کروڑ روپے سے زائد کی کمی۔حکومتی مالیاتی اداروں ،مقامی بروکریج ہاو¿سز سمیت دیگر انسٹی ٹیوشنز کی جانب سے آئل ،ٹیلی کام اور بینکنگ سیکٹرمیں خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای 100انڈیکس 22294پوائنٹس کی بلند سطح پر بھی دیکھا گیا تاہم متحدہ قومی موومنٹ کے قائد کی جانب سے مہاجروں کو صفحہ ہستی سے مٹانے کے بیان اور ٹارگٹڈ آپریشن پر تحفظات کے باعث مقامی سرمایہ کار گروپ تذبذب کا شکار نظر آئے اور اپنے حصص فروخت کرنے کو ترجیح دی جس کے نتیجے میں ایک موقع پر کے ایس ای 100انڈیکس 22086پوائنٹس کی نچلی سطح پر بھی دیکھا گیا تاہم اتارچڑھاو¿ کاسلسلہ سارا دن جاری رہا تاہم مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای 100انڈیکس 37.32پوائنٹس کمی سے 22152.35پوائنٹس پر بند ہو ا۔مجموعی طور پر345 کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں سے123کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،204کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿ میں کمی جبکہ 18کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿ میں استحکام رہا ۔سرمایہ کاری مالیت میں 3ارب4 کروڑ65 لاکھ 47ہزار824روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جبکہ سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر 52 کھرب55 ارب 82کروڑ33لاکھ 99ہزار20روپے ہوگئی ۔ لاہور سٹاک ایکسچینج میں جمعرات کے روزمندی کا رجحان رہا ۔ مجموعی طور پر83کمپنیوں کا کاروبارہوا۔8کمپنیوں کے حصص میں اضافہ۔24 کمپنیوں کے حصص میں کمی جبکہ51کمپنیوں کے حصص میں استحکام رہا۔ ایل ایس ای 25 انڈیکس 20.43 پوائینٹس کی کمی کے ساتھ4424.01پربندہوا۔