لیسکو حکام کی عدم توجہ، 1200 فیڈرز سے بجلی چوری عروج پر پہنچ گئی

لیسکو حکام کی عدم توجہ، 1200 فیڈرز سے بجلی چوری عروج پر پہنچ گئی

لاہور(نیوزرپورٹر) لیسکو حکام کی عدم توجہ اور ناقص منصوبہ بندی سے 1495 فیڈر میں سے 12 سو فیڈرز میں بجلی چوری عروج پر پہنچ گئی، تفصیلات کے مطابق وزیر مملکت عابد شیر علی نے چند ماہ پہلے اعلان کیا تھا کہ جن فڈیرز میں بجلی چوری ہوئی اس میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ اتنا ہی زیادہ ہوگا مگر لیسکو حکام نے وزیر مملکت کے اعلان اور احکامات کو ہوا میں اڑا دیا، لیسکو کے لاہور، شیخوپورہ، ننکانہ، اوکاڑہ اور قصور اضلاع کے 1495 فیڈرز میں سے صرف 298 فیڈرز میں بجلی چوری نہیں ہو رہی جبکہ 12سو فیڈرز میں بجلی چوری عروج پر ہے، 31فیڈرز کے لاسز 50فیصد، 22فیصڈرز کے لاسز 41سے 50فیصد، 64 فیڈرز میں لاسز 31سے 40 فیصد، 210فیڈرز کے لاسز 21سے30فیصد، 343فیڈرز کے لاسز 11سے 20فیصد اور527 فیڈرز کے لاسز 10فیصد ہیں، ذرائع کا کہنا ہے کہ لیسکو کے اعلیٰ حکام کے نوٹس میں ہر ماہ لیسکو کی رپورٹ آتی ہے مگر اس حوالے سے کسی بھی افسر کو تاحال معطل نہیں کیا گیا، لیسکو کے فیلڈ افسران بجلی چوری تو بڑے آزادانہ طریقے سے کروا رہے ہیں ، بجلی چور کو چھوڑ کر غریب صارف پر اوور بلنگ کرائی جاتی ہے اور اوسطاً بلنگ کے حوالے سے صارفین کو دفاتر میں کئی کئی ماہ خوار ہونا پڑتا ہے، لیسکو کے صارفین نے چیف ایگزیکٹو لیسکو قیصر زمان سے ایسی صورت حال کا فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا۔